بھارتی فوج کشمیر میں کم عمر لڑکوں کو گرفتار کررہی ہے

امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ نے ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر کے بارے میں سنسنی خیز انکشاف کرتے ہوئے لکھا ہے کہ کشمیر میں بھارتی فوج بڑے پیمانے پرنوجوان کشمیریوں کو گرفتار کررہی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ نے ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر کے بارے میں سنسنی خیز انکشاف کرتے ہوئے لکھا ہے کہ کشمیر میں بھارتی فوج بڑے پیمانے پرنوجوان کشمیریوں کو گرفتار کررہی ہے۔امریکی اخبار نے اپنی  رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ کشمیر میں بھارتی فوج کم عمر لڑکوں کو گرفتار کررہی ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ کشمیری والدین پریشان ہیں، بھارتی فوج دھڑا دھڑ کم عمر نوجوانوں کو گرفتار کر رہی ہے۔رپورٹ کے مطابق بھارت کے مسلح فوجی رات کے اندھیرے میں گھروں کی دیواریں پھلانگ کر لڑکوں کو گرفتار کر رہے ہیں۔ امریکی اخبار سے نثار احمد میر نے اپنے بیٹے دانش اور مسجد سے واپسی پر گرفتار کیے گئے 13سالہ فرحان فاروق کی والدہ نازیہ نے بھی گفتگو کی۔فرحان کی والدہ نے امریکی اخبار کو بتایا کہ روز سری نگر سے 10 کلو میٹر دور پولیس اسٹیشن جاتی ہوں، بے قصور بیٹے کو لاک اپ میں روتا دیکھ کر دل روتا ہے۔ امریکی اخبار کے مطابق فرحان ان ہزاروں کشمیریوں میں سے ایک ہے جو بغیر الزام جیلوں میں ہیں، ماں نازیہ روز بیٹے سے ملنے تھانے جاتی ہے، لیکن ملاقات روز نہیں ہوتی۔ نثار احمد میر نے کہا کہ آدھی رات کو پولیس دیوار پھاند کر گھر میں گھسی، میرے 17سالہ بیٹے دانش کو گرفتار کرکے لے گئی۔ اخبار نے ماہرین کے حوالے سے لکھا کہ کشمیر میں جیسا ظلم آج ہو رہا ہے، اس کی پہلے مثال نہیں ملتی، پہلے گرفتاریاں پتھر مارنے پر ہوتی تھیں، اب صرف پتھر مارنے کے شبہ میں گرفتار کر لیا جاتا ہے۔رپورٹ کے مطابق سری نگر جیل کے باہر کھڑے کشمیری نے کہا کہ پوری وادی جیل ہے، کچھ لوگ اندر ہیں، کچھ ہماری طرح باہر لیکن قید ہیں۔

News Code 1893390

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 8 =