امریکہ کا طالبان کے ساتھ معاہدے کے بعد بھی افغانستان میں مستقل فوج رکھنے کا اعلان

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ اگر طالبان کے ساتھ کسی معاہدے پر پہنچتے ہیں تو افغانستان میں امریکی فوجیوں کی تعداد 8 ہزار 600 تک ہوجائے گی لیکن افغانستان میں ان کی مستقل موجودگی برقرار رہے گی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ اگر طالبان کے ساتھ کسی معاہدے پر پہنچتے ہیں تو افغانستان میں امریکی فوجیوں کی تعداد 8 ہزار 600 تک ہوجائے گی لیکن افغانستان میں ان کی مستقل موجودگی برقرار رہے گی۔ اطلاعات کے مطابق امریکی صدر نے فاکس نیوز ریڈیو کو دیے گئے ایک انٹرویو میں کہا کہ  ہم فوجیوں کی تعداد 8 ہزار 600 تک کرنے جارہے ہیں اور پھر ہم وہاں ہمیشہ اپنی موجودگی برقرار رکھیں گے۔ واضح رہے کہ القاعدہ کی جانب سے 11 ستمبر 2001 کو امریکی سرزمین پر ہونے والے حملے کے بعد پہلی مرتبہ امریکی فوجیوں کو افغانستان بھیجا گیا تھا۔

News Code 1893337

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 2 =