برطانوی پارلیمنٹ کی معطلی کا فیصلہ عدالت میں چیلنج

برطانیہ کے وزیراعظم بورس جونسن کی جانب سے یورپی یونین سے علیحدگی ( بریگزٹ) معاہدے سے قبل برطانوی پارلیمنٹ کی معطلی سے متعلق فیصلے کو عدالت میں چیلنج کردیا گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ برطانیہ کے وزیراعظم بورس جونسن کی جانب سے یورپی یونین سے علیحدگی ( بریگزٹ) معاہدے سے قبل برطانوی پارلیمنٹ کی معطلی سے متعلق فیصلے کو عدالت میں چیلنج کردیا گیا ہے۔ اپوزیشن رہنما جیرمی کوربن نے حکومتی فیصلے کو ’جمہوریت کے لیے خطرہ‘ قرار دیا تھا اور ملکہ ایلزبتھ سے فوری اجلاس طلب کرنے کی درخواست کی تھی۔

اطلاعات کے مطابق بریگزٹ کی مخالف اور کاروبار سے وابستہ خاتون گینا میلر نے بتایا کہ انہوں نے پارلیمنٹ معطلی سے متعلق ’اثرات اور ارادوں کے خلاف عدالتی نظرثانی' کی درخواست دائر کردی کیونکہ 'ہم سمجھتے ہیں کہ بورس جونسن کی یہ درخواست غیرقانونی ہے'۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز بورس جونسن کی درخواست پر ملکہ ایلزبتھ دوم نے 5 ہفتوں کے لیے برطانوی پارلیمنٹ معطل کرنے کی منظوری دے دی تھی۔

News Code 1893336

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 6 =