ایران کا واشنگٹن کے ساتھ مذاکرات کا کوئی ارادہ نہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے امریکہ کے ساتھ مذاکرات کی پیشکش کو رد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران کا واشنگٹن کے ساتھ مذاکرات کا کوئی ارادہ نہیں، ہر قسم کی ثالثی امریکہ کو ایٹمی معاہدے پر واپس لانے پر مرکوز ہونی چاہیے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے امریکہ کے ساتھ مذاکرات کی پیشکش کو رد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران کا واشنگٹن کے ساتھ مذاکرات کا کوئی ارادہ نہیں، ہر قسم کی ثالثی امریکہ کو ایٹمی معاہدے پر واپس لانے پر مرکوز ہونی چاہیے۔

ایرانی وزیر خارجہ نے فن لینڈ کے وزیر خارجہ کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایران اور امریکہ کے درمیان ثالثی کا کردار ادا کرنے والے ممالک کو اپنی توجہ امریکہ کو ایٹمی معاہدے  پر واپس لانے پر مرکوز کرنی چاہیے۔ ظریف نے کہا کہ ایران نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کے سلسلے میں امریکہ کے ساتھ تفصیلی مذاکرات کئے ہیں۔ امریکہ کو معاہدے میں کئے گئے اپنے وعدوں پر عمل کرنا چاہیے۔ ایران نے مذاکرات کی میز ترک نہیں کی بلکہ امریکہ نے ایٹمی معاہدے سے خارج ہوکر اپنی بد نیتی اور عہد شکنی کا ثبوت دیا ہے۔ ظریف نے کہا کہ امریکہ کو سکیورٹی کونسل کی قرارداد نمبر 2231 کے مطہابق عمل کرنا چاہیے کیونکہ امریکہ نے خود بھی اس قرارداد کے حق میں ووٹ دیا تھا۔

News Code 1893068

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 11 =