بھارت نے سیلابی پانی پاکستانی دریاؤں میں چھوڑدیا/ پاکستان میں سیلاب کا خطرہ

پاکستان کا کہنا ہے کہ بھارت نے سیلابی پانی پاکستانی دریاؤں ستلج اور سندھ میں چھوڑدیا جس کے نتیجے میں پاکستان میں سیلاب کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کا کہنا ہے کہ بھارت نے سیلابی پانی پاکستانی دریاؤں ستلج اور سندھ میں چھوڑدیا جس کے نتیجے میں پاکستان میں سیلاب کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے۔ پاکستانی حکام کے مطابق بھارت نے دریاؤں میں بغیر اطلاع سیلابی پانی چھوڑ دیا ہے جس کے نتیجے میں دریائے ستلج اور دریائے سندھ میں سیلاب کا خدشہ پیدا ہوگیا، دریائے ستلج میں 1988ء کے بعد یہ ایک بڑا سیلاب ہوگا جس سے ہزاروں ایکڑ زمین اور سیکڑوں دیہات متاثر ہوں گے۔

اطلاعات کے مطابق بھارت کی طرف سے دریائے ستلج میں سیلابی پانی چھوڑے جانے کے باعث اس میں طغیانی کا خطرہ پیدا ہوگیا، خود بھارتی علاقے میں دریائے ستلج کے اطراف 61 دیہات خالی کروالیے گئے اور لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کیے جانے کے انتظامات کیے جارہے ہیں۔

بھارت نے روپر ہیڈورکس سے دولاکھ کیوسک پانی دریائے ستلج میں چھوڑنے کا عندیہ دیا ہے اور ہر ایک گھنٹے بعد پانی چھوڑا جارہا ہے۔ بھارت کی طرف سے دریائے ستلج میں پانی چھوڑے جانے کا سلسلہ اتوار کی شام سے شروع ہوا جورات گئے تک جاری رہے گا۔ یہ بھی اطلاعات ہیں کہ دریائے ستلج میں 1988ء کے بعد یہ ایک بڑا سیلاب ہوگا جس سے ہزاروں ایکڑ زمین، سیکڑوں دیہات متاثر ہوں گے۔

محکمہ موسمیات نے بھی دریائے ستلج میں پانی کی سطح بلند ہونے کی پیش گوئی کی ہے تاہم ابھی تک سیلاب سے متعلق کوئی وارننگ جاری نہیں کی گئی۔

اطلاعات کے مطابق بھارت نے اچانک الچی ڈیم سے بھی پانی چھوڑ دیا ہے پانی چھوڑنے سے دریائے سندھ میں سیلاب کا خدشہ پیدا ہوگیا جس کے باعث پی ڈی ایم اے نے متعلقہ اداروں کو مراسلہ جاری کر دیا ہے۔

News Code 1893056

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 6 =