امارات نےبھارت کی حمایت کردی/ کشمیرکو بھارت کا اندرونی معاملہ قرار دیدیا

متحدہ عرب امارات نے بھارت کی حمایت کرتے ہوئے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے معاملے کو بھارت کا اندرونی معاملہ قرار دیدیا ہے جبکہ خلیج فارس کے دیگر عرب ممالک خاموشی اخۃیار کئے ہوئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اے پی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر کی خصوصی حیثیت سے متعلق آرٹیکل 370 ختم کرنے کے بھارتی اقدام پرخلیج فارس کے عرب ممالک اپنے تجارتی مفادات کے باعث خاموش ہیں۔اطلاعات کے مطابق خلیجی ممالک اس معاملے پر بھارت سے سالانہ 100 ارب ڈالر کی تجارت کے باعث خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں بھارت خلیج فارس کےعرب ممالک کا سب سے اہم اقتصادی شراکت دار ہے۔  کشمیر کے معاملے پر سعودی عرب سمیت دیگر خلیجی ممالک کویت، قطر، بحرین اور عمان کی جانب سے اس حوالے سے کوئی بیان جاری نہیں کیا گیا، جبکہ متحدہ عرب امارات نے بھارت کی حمایت کرتے ہوئے کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کرنےکے معاملے کو بھارت کا اندرونی معاملہ قرار دیا ہے۔ بھارت میں امارات کے سفیر احمد البنا نے کہا ہے کہ کشمیر میں کی گئی تبدیلیوں سے انصاف، سکیورٹی میں بہتری آئے گی جس سے امن و استحکام پیدا ہوگا۔ بھارت اور متحدہ عرب امارات کے درمیان دو طرفہ تجارت گزشتہ برس 550 ارب ڈالر سے تجاوز کرگئی تھی جس کے بعد بھارت متحدہ عرب امارات کا دوسرا بڑا تجارتی شراکت دار بن گیا تھا۔ بھارت کے وزیر خارجہ کے مطابق متحدہ عرب امارات میں بھارتی سرمایہ کاری 55 ارب ڈالر ہے اور دبئی کی ریئل اسٹیٹ مارکیٹ میں بھارتی شہری سب سے بڑے غیر ملکی سرمایہ کار ہیں۔ ادھر بحرین میں 11 اگست کو عیدالاضحی کی نماز کی ادائیگی کے بعد بھارت مخالف اور کشمیر کے حق میں مظاہرے کرنے والے جنوبی ایشیائی رہائشیوں کو گرفتار کیا گیا تھا۔ ذرائع کے مطابق خلیج فارس کے عرب ممالک عملی طور پر بھارت کے ساتھ ہیں۔

News Code 1892967

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 6 =