یوم عرفہ دعا اور توبہ قبول ہونے کا اہم دن ہے

یوم عرفہ اللہ تعالی کی بارگاہ میں تضرع و زاری نیز دعا اور توبہ قبول ہونے کا اہم دن ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق یوم عرفہ اللہ تعالی کی بارگاہ میں  تضرع و زاری نیز دعا اور توبہ قبول ہونے کا اہم دن ہے۔ یہ دن در حقیقت گناہوں سے پاک ہونے اور اللہ تعالی کی بارگاہ میں واپس لوٹنے کا دن ہے۔عرفہ کے دن دعا کی بہت زيادہ اہمیت بیان کی گئي ہے ۔ سید ابن طاؤوس نے کتاب اقبال میں حضرت امام محمد باقر علیہ السلام سے نقل کیا ہے کہ اگر یوم عرفہ کسی نے روز ہ رکھا ہے اور روزہ دعا کرنے میں کمزوری اور ضعف کا موجب ہو تودعا کی خاطر روزہ افطار کرلینا چاہیے۔

حضرت امام سجاد علیہ السلام فرماتے ہیں: عرفہ کے دن اللہ تعالی کی رحمت کے دروازے اپنے بندوں پر کھل جاتے ہیں اور اللہ تعالی کا اس دن اپنے باندوں پر خاص لطف و کرم ہوتا ہے اور توبہ کی وجہ سے اس دن دعا قبول ہوجاتی ہے۔

اس دن حضرت امام حسین علیہ السلام کی زیارت اور کربلائے معلی میں حاضر ہونے کی سخت تاکید کی گئی جس کے نتیجے میں حضرت امام حسین علیہ السلام کی عظمت اور جلالت دو چنداں ہوجاتی ہے بعض روایات کے مطابق عرفہ کے دن اللہ تعالی پہلے حضرت امام حسین علیہ السلام کے زائرین پر نظر کرتا ہے اور اس کے بعد عرفات میں حاضر ہونے والے حجاج پر نظر کرتا ہے۔

حضرت امام صادق علیہ السلام فرماتے ہیں: " انّ اللّه تبارک و تعالی یتجلّی لزوّار قبر الحسین(ع) قبل اهل العرفات و یقضی حوائجهم و یغفر ذنوبهم و یشفّعهم فی مسائلهم ثمّ یأتی اهل عرفه فیفعل بهم ذلک." اللہ تعالی عرفات سے پہلے حضرت امام حسین علیہ السلام کے زائرین پر نظر کرتا ہےان کی توبہ کوقبول کرتا ہے ان کے گناہوں کو بخش دیتا ہے اور ان کے مسائل اور مشکلات کو حل کرتا ہے اور اس کے بعد اہل عرفہ کے ساتھ بھی ایسا ہی سلوک کرتا ہے۔

روایات سے معلوم ہوتا ہے کہ یوم عرفہ دعا ، توبہ اور انابہ کے لحاظ سے بہت ہی اہم دن ہے اور مؤمنین کو اس دن کے فیوض اور برکات سے بھر پور استفادہ کرنا چاہیے۔

News Code 1892850

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 2 =