ترکی کا روس کے ساتھ ملکر میزائل بنانے کا اعلان

ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے روس سے میزائل نظام کی خریداری پر امریکہ کی جانب سے دی گئیں پابندی کی دھمکیوں کو نظر انداز کرتے ہوئے کہا ہے کہ اب اگلا قدم میزائل نظام کو روس کے ساتھ مشترکہ طور پر تیار کرنا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اے پی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے روس سے میزائل نظام کی خریداری پر امریکہ کی جانب سے دی گئیں پابندی کی دھمکیوں کو نظر انداز کرتے ہوئے کہا ہے کہ اب اگلا قدم میزائل نظام کو روس کے ساتھ مشترکہ طور پر تیار کرنا ہے۔

اطلاعات کے مطابق ترک صدر رجب طیب اردوغان نے روس سے خریدے گئے 'ایس-400' میزائل نظام کی ایک اور کھیپ پہنچنے کے بعد انقرہ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کی شدید مخالفت کے باوجود روس سے میزائل نظام خرید رہے ہیں۔

امریکہ کا حوالہ دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ‘وہ کہتے تھے کہ وہ نہیں خرید سکتے، وہ کہتے تھے کہ میزائل کو لا نہیں سکتےوہ کہتے تھے کہ ان کے لیے یہ خریدنا ٹھیک نہیں اور آج آٹھواں جہاز پہنچ چکا ہے اور نظام کو اتارنا شروع کردیا گیا ہے۔ترک صدر نے کہا کہ میزائل نظام کو ایک سال سے کم عرصے میں مکمل طور پر منتقل کر دیا جائے گا۔ طیب اردوان نے کہا کہ ‘اب اگلا قدم میزائل نظام کو روس کے ساتھ مشترکہ طور پر تیار کرنا ہے۔

News Code 1892190

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 0 =