امریکہ کا  دہشت گردوں ، منافقین اور ضد انقلاب عناصر کے ساتھ  قریبی تعاون جاری

اقوام متحدہ میں ایران کے مستقل نمائندے نے امریکہ ، یورپ اور بعض علاقائی ممالک کی طرف سے ضد انقلاب عناصر اور منافقین کے ساتھ تعاون کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ اور اس اتحادی ممالک ایران میں تخریبی کارروائی اور عدم استحکام پیدا کررہے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ میں ایران کے مستقل نمائندے مجید تخت روانچی نے امریکہ ، یورپ اور بعض علاقائی ممالک کی طرف سے ضد انقلاب عناصر اور منافقین کے ساتھ تعاون کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ اور اس کے اتحادی ممالک ایران میں تخریبی کارروائی اور عدم استحکام پیدا کررہے ہیں۔ ایرانی نمائندے اقوام متحدہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں نے اب تک ایران میں 17 ہزار سے زائد شہریوں کو دہشت گردی کا نشانہ بنایا اور دہشت گردی کانشانہ بننے والوں میں ایران کے سابق صدر، وزیر اعظم ، عدلیہ کے سربراہ ، ایرانی مسلح افواج کے ڈپٹی کمانڈر ، پارلیمنٹ کے 27 نمائندے اور 4 ایٹمی ماہرین بھی شامل ہیں۔ ضد انقلاب عناصر اور منافقین نے ایران میں 12 ہزار عام شہریوں کو اپنی دہشت گردی اور بربریت کا نشانہ بنایا ہے جنھیں آج امریکہ ، یورپ اور ان کے اتحادی عرب ممالک کی حمایت حاصل ہے۔ تخت روانچی نے کہا کہ امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے اور منافقین کے درمیان گہرا تعاون جاری ہے۔ امریکہ اور اس کے اتحادی ممالک دنیا بھر دہشت گردی کو فروغ دے رہے ہیں اور انھیں کوئی کچھ کہنے والا نہیں۔

News Code 1892029

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 2 =