لیبیا میں تشدد ، خونریزي اور قتل و غارت گری کی ذمہ داری نیٹو پر عائد ہوتی ہے

روسی صدر ولا دیمیر پوتین نے کہا ہے کہ لیبیا میں قتل و غارت گری اور امن و امان کی مخدوش صورتحال کی ذمہ داری نیٹو پر عائد ہوتی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے روسیا الیوم کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ روسی صدر ولا دیمیر پوتین نے کہا ہے کہ لیبیا میں قتل و غارت گری اور امن و امان کی مخدوش صورتحال کی ذمہ داری نیٹو پر عائد ہوتی ہے۔ اطلاعات کے مطابق روسی صدر نے اطالوی وزیراعظم کونتے سے اہم ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس میں لیبیا کی صورت حال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ لیبیا میں صورت حال بد سے بد تر ہوتی جارہی ہے اور اس خوں ریزی کا ذمہ دار کوئی اور نہیں بلکہ نیٹو ہے۔ روسی صدر نے یورپی یونین کی جانب سے 23 جون 2020ء تک عائد کی گئی پابندیوں کے حوالے سے کہا ہے کہ وہ یورپی یونین کے ساتھ تعلقات میں بہتری کی امید رکھتے ہیں، یورپی یونین نے کریمیا اور سواس توپول کے غیر قانونی الحاق پر روس پر پابندیاں عائد کررکھی ہیں۔

News Code 1891949

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 0 =