صدی معاملے کی شکست یقینی / مشترکہ ایٹمی معاہدے کو توڑنے کا جواب دیا جائےگا

رہبر معظم انقلاب اسلامی کے بین الاقوامی امور کے مشیر ڈاکٹر علی اکبر ولایتی نے فلسطین کے بارے میں صدی معاملے کی شکست کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امت مسلمہ، فلسطین اور بیت المقدس کو فروخت کرنے کی کسی کو اجازت نہیں دےگی۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق رہبر معظم انقلاب اسلامی کے بین الاقوامی امور کے مشیر ڈاکٹر علی اکبر ولایتی نے فلسطین کے بارے میں صدی معاملے کی شکست کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امت مسلمہ، فلسطین اور بیت المقدس کو فروخت کرنے کی  کسی کو اجازت نہیں دےگی۔ ڈاکٹر ولایتی نے مشترکہ ایٹمی معاہدے پر عمل در آمد  کے سلسلے میں یورپی ممالک کو دی گئی 60 روزہ مہلت کے اختتام کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے مشترکہ ایٹمی معاہدے سے خارج ہوکر معاہدے کی آشکارا خلاف ورزی کا ارتکاب کیا جبکہ یورپی ممالک نے بھی مشترکہ ایٹمی معاہدے سے خارج نہ کر اپنے وعدوں پر عمل نہیں کیا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ امریکہ نے بلاواسطہ مشترکہ ایٹمی معاہدے کو نقض کیا جبکہ یورپی ممالک مشترکہ ایٹمی معاہدے کو بالواسطہ نقض کررہے ہیں۔

ڈاکٹر علی اکبر ولایتی نے کہا کہ ایران نے مکمل طور پر مشترکہ ایٹمی معاہدے کی روح کے مطابق عمل کیا اور بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی نے اپنی 10 سے زائد رپورٹوں میں اس بات کی تائید اور تصدیق کی کہ ایران مشترکہ ایٹمی معاہدے پر گامزن ہے لیکن معاہدے پر دستخط کرنے والے ممالک نے اس پر عمل نہیں کیا جس پر ایران کو افسوس ہے اور ایران نے بھی معاہدے کے مطابق اس سے خارج ہونے کے اقدام کا آغاز کردیا ہے اور مشترکہ ایٹمی معاہدے میں شریک ممالک جتنا اس پر عمل کریں گے ایران بھی اتنا ہی عمل کرےگا۔

News Code 1891924

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 4 =