پاکستانی تاریخی میں ڈالر کی قدر بلند ترین سطح 164 روپے تک پہنچ گئی

پاکستانی روپے کی قدر میں مسلسل کمی کا سلسلہ جاری ہے ، انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر پاکستانی تاریخ کی بلند ترین سطح 164 روپے کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستانی روپے کی قدر میں مسلسل کمی کا سلسلہ جاری ہے ، انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر پاکستانی تاریخ کی بلند ترین سطح 164 روپے  کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق پاکستانی روپے کی قدر میں مسلسل کمی کا سلسلہ جاری ہے اور ڈالر تیزی کے ساتھ ڈبل سنچری کی جانب گامزن ہے، آج انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر مزید 7 روپے  مہنگا ہوگیا جس کے بعد ڈالر کی قیمت 164 روپے کی نئی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی۔ایکسچینج کمپنیز ایسوسی ایشن کے مطابق اوپن مارکیٹ میں ڈالر 4 روپے10 پیسے مہنگا ہوگیا جس کے بعد اوپن مارکیٹ میں ڈالر 156 روپے 90 پیسے سے بڑھ کر 162 روپے کا ہوگیا۔روپے کی قدر کم ہونے سے جون کے مہینے میں قرضوں کی مالیت میں 800 ارب روپے کا اضافہ ہوا ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ چند ماہ کے دوران ڈالر 10 روپے سے زیادہ مہنگا ہوا ہے جس کے باعث پاکستان پر غیرملکی قرضوں کے حجم میں ایک ہزار ارب روپے سے زائد اضافہ ہوگیا ہے جبکہ ترقیاتی منصوبوں کی لاگت بھی بڑھ گئی ہے۔

News Code 1891680

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 4 =