ایران مشترکہ ایٹمی معاہدے کی روشنی میں مرحلہ واراس سے خارج ہوجائے گا

اسلامی جمہوریہ ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سکریٹری نے مشترکہ ایٹمی معاہدے سے امریکہ کے خارج ہونے اور یورپی ممالک کی طرف سے اس پر عمل نہ کرنے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ایران مشترکہ ایٹمی معاہدے کی روشنی میں مرحلہ واراس سے خارج ہوجائےگا۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سکریٹری علی شمخانی نے مشترکہ ایٹمی معاہدے سے امریکہ کے خارج ہونے اور یورپی ممالک کی طرف سے اس پر عمل نہ کرنے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ایران مشترکہ ایٹمی معاہدے کی روشنی میں مرحلہ واراس سے خارج ہوجائےگا۔ انھوں نے کہا کہ مشترکہ ایٹمی معاہدے کے سلسلے میں ایران کی اعلی قومی سلامتی میں طے پانے والے اقدامات کا سنجیدگی کے ساتھ پیچھا کیا جائے گا۔ انھوں نے کہا کہ اگر مشترکہ ایٹمی معاہدے کے باقی ماندہ اراکین نے معاہدے کے مطابق عمل نہ کیا تو ایران بھی مشترکہ ایٹمی معاہدے کے مطابق اس سے بتدریج خآرج ہوجائےگا۔ انھوں نے کہا کہ مشترکہ ایٹمی معاہدہ چند جانبہ ہے جسے سکیورٹی کونسل نے باقاعدہ طور پر منظور کیا ہے اور جس پر ایران عمل کیا ہے لیکن امریکہ معاہدے کی  خلاف ورزی کرتے ہوئے اس سے خارج ہوگیا ہے، اب اگر باقی ماندہ اراکین اس پر عمل نہیں کرتے تو ایران بھی اس سے خارج ہوجانے پر مجبور ہوجائےگا۔ انھوں نے کہا کہ ایران خلیج فارس میں امن و سلامتی کا حواہاں ہے لیکن اگر کسی نے ایران کی سلامتی کو خطرے میں ڈالنے کی کوشش کی تو اسے منہ توڑ جواب دیا جائےگا۔

News Code 1891496

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 10 =