صدی معاملے کا انجام اچھا نہیں ہوگا

فرانس کے وزير خارجہ نے امریکہ کی یکطرفہ پالیسی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ صدی معاملے کا انجام اچھا نہیں ہوگj کیونکہ اس معاملہ میں فلسطین کی رضایت شامل نہیں اس معاملے میں صرف اسرائیل کی رضایت کو مد نظر رکھا گیا ہے ۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اسپوٹنک کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ فرانس کے وزير خارجہ نے امریکہ کی یکطرفہ پالیسی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ صدی معاملے کا انجام اچھا نہیں ہوگj کیونکہ اس معاملہ میں فلسطین کی رضایت شامل نہیں  اس معاملے میں صرف اسرائیل کی رضایت کو مد نظر رکھا گیا ہے ۔فرانسیسی وزیر خارجہ نے مسئلہ فلسطین کے بارے میں  امریکی صدر ٹرمپ کے منصوبہ کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ٹرمپ کا صلح کا منصوبہ کیسا بھی کیوں نہ ہو وہ  دونوں فریقوں کی خوشحالی کا سبب نہیں بنےگا۔  لودریان نے امریکی صدر کی طرف سے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے پر بھی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یورپی ممالک امریکہ کے اس اقدام کے خلاف ہیں۔ لودریان نے مراکش کے دورے سے قبل یہ بیان صادر کیا ہے۔

News Code 1891208

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 2 =