سوڈان میں فوجی حکومت کے خلاف عوامی دھرنا جاری/ فائرنگ سے متعدد افراد ہلاک و زخمی

سوڈان میں فوجی بغاوت اور ایمرجنسی قائم کرنے کےخلاف فوج کے ہیڈ کوارٹر کے باہر دھرنا دینے والے مظاہرین پر فوجی اہلکاروں نے براہ راست فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں 2 افراد اور 10 زخمی ہوگئے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے النشرہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سوڈان میں فوجی بغاوت اور ایمرجنسی قائم کرنے کےخلاف فوج کے ہیڈ کوارٹر کے باہر دھرنا دینے والے مظاہرین پر فوجی اہلکاروں نے براہ راست فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں 2 افراد اور 10 زخمی ہوگئے۔

اطلاعات کے مطابق سوڈان کے دارالحکومت خرطوم میں اپریل میں ہونے والی فوجی بغاوت اور ملک میں 3 ماہ کے لیے ایمرجنسی کے نفاذ کیخلاف دھرنا دینے والے مظاہرین پرفوج نے براہ راست فائرنگ کردی، فائرنگ سے 2 افراد ہلاک اور 10 زخمی ہوگئے۔

اس سے قبل سوڈان میں مہنگائی کے طوفان نے عوام کے اشتعال کو مزید اکسایا جس کے بعد ہنگامے پھوٹ پڑے جو فوجی بغاوت اور صدر عمر البشیر کی حراست پر ختم ہوئے۔ فوج نے 11 اپریل کو ملک کا انتظام سنبھالنے کے بعد 3 ماہ کے لیے ایمرجنسی نافذ کردی تھی اور 2 سال بعد الیکشن کرانے کا اعلان کیا ہے۔

News Code 1891036

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 8 =