ہولوکاسٹ پر ویڈیو بنانے والے الجزیرہ کے 2 صحافی برطرف

قطر کے سرکاری نشریاتی ادارے الجزیرہ نے اپنے 2 صحافیوں کو ہولوکاسٹ ویڈیو بنانے پر برطرف کردیا جس میں انہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ یہودی ہولوکاسٹ کے بارے میں غلط بیانی سے کام لیتے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ قطر کے سرکاری نشریاتی ادارے الجزیرہ نے اپنے 2 صحافیوں کو ہولوکاسٹ ویڈیو بنانے پر برطرف کردیا جس میں انہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ یہودی ہولوکاسٹ کے بارے میں غلط بیانی سے کام لیتے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق الجزیرہ کی آن لائن " اے جے پلس " عرب سروس پر شائع کردہ ویڈیو میں صحافیوں کا کہنا تھا کہ" ’ہولوکاسٹ کے دوران نازی جرمنوں کے ہاتھوں 60 لاکھ یہودیوں کی ہلاکت کا بیانیہ صیہونی تحریک سے آیا ہے"۔

الجزیرہ میڈیا نیٹ ورک کی جانب سے اس صورتحال پر جاری کردہ بیان میں بتایا گیا کہ " اے جے پلس کی اعلیٰ انتظامیہ کی جانب سے اس ویڈیو اور اس سے منسلک پوسٹ کو فوری طور پر اے جے پلس کے تمام سوشل میڈیا پیجز اور اکاؤنٹس سے ہٹا دیا گیا کیوں کہ یہ الجزیرہ نیٹ ورک کے ادارتی پالیسی کی خلاف ورزی پر مبنی تھا"۔

News Code 1890685

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 2 =