جرمنی اور یورپی ممالک کو ایران اور امریکہ کے درمیان کشیدگی کم کرنے کے لئے کردار ادا کرنا چاہیے

جرمن پارلیمنٹ کے اقتصادی تعاون اور فروغ کمیشن کے سربراہ اور جوہری سلامتی کمیشن کے رکن نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ جرمنی اور یورپی یونین کو ایران اور امریکہ کے درمیان کشیدگی کم کرنے کے لئے کردار ادا کرنا چاہیے۔

مہر خبررساں ایجنسی کے بین الاقوامی امور کے نامہ نگار کے ساتھ گفتگو میں جرمن پارلیمنٹ کے اقتصادی تعاون اور فروغ کمیشن کے سربراہ  اور جوہری سلامتی کمیشن کے رکن اولوف اینڈر بیک نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ جرمنی اور یورپی یونین کو ایران اور امریکہ کے درمیان کشیدگی کم کرنے کے لئے کردار ادا کرنا چاہیے۔

جرمن پارلیمنٹ کے اقتصادی تعاون اور فروغ کمیشن کے سربراہ نے مہر نیوز نامہ نگار کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مشترکہ ایٹمی معاہدہ بین الاقوامی سفارتی کوششوں کے نتیجے میں وجود میں آیا اور جس پر کافی وقت بھی صرف کیا گيا اور اس معاہدے کا مقصد بھی مشرق وسطی کو ایٹمی ہتھیاروں سے پاک رکھنا تھا۔

جرمن پارلیمان کے رکن نے مشترکہ ایٹمی معاہدے سے امریکہ کے خارج ہونے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مشترکہ ایٹمی معاہدے سے امریکہ کا خروج بین الاقوامی معاہدے کی خلاف ورزی ہے۔ ایران کے ایٹمی پروگرام پر بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کی قریبی نگرانی جاری ہے ایران کا ایٹمی پروگرام پرامن مقاصد کے لئے ہے۔

اینڈر بیک نے کہا کہ ایران اور امریکہ کے درمیان جاری کشیدگی کو کم کرنے کے سلسلے میں جرمنی اور یورپی ممالک کو کردار ادا کرنا چاہیے۔

News Code 1890636

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 9 + 5 =