پشاورکے اسپتالوں میں ڈاکٹروں کا احتجاج دوسرے روز بھی جاری

پاکستان کے شہر پشاورکے تینوں بڑے اسپتالوں میں ڈاکٹروں کا احتجاج دوسرے روز بھی جاری ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے شہر پشاورکے تینوں بڑے اسپتالوں میں ڈاکٹروں کا احتجاج دوسرے روز بھی جاری ہے۔ سرکاری ڈاکٹروں نے لیڈی ریڈنگ اسپتال پشاور میں احتجاجی میدان سجالیا ہے۔ جس میں ڈاکٹروں کے قافلے جوق در جوق آرہے ہیں۔ اس احتجاج میں اب خیبر میڈیکل کالج اور خیبر ٹیچنگ اسپتال پشاور کے فیکلٹی ممبران بھی شامل ہوگئے ہیں۔ جس کے بعد خیبر میڈیکل کالج میں ٹیچنگ اسٹاف نے کلاسز کا بائیکاٹ کردیا ہے۔ ڈاکٹروں نے اپنے نجی کلینکس کو بھی بند کرنے کا اعلان کیا ہے جب کہ اپنے مطالبات پر عملدرآمد تک احتجاج کو جاری رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ڈاکٹروں نے تمام سرکاری اسپتالوں میں او پی ڈی سروسز کا مکمل بائیکاٹ کیا ہوا ہے۔ جس کی وجہ سے تمام اوپی ڈیز ویران پڑی ہوئی ہیں جبکہ دور دراز سے آنے والے مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

بتایا جارہا ہے کہ خیبر ٹیچنگ اسپتال نے اس معاملے پر پروفیسر ڈاکٹر محمود اورنگزیب انچارج سرجیکل اے یونٹ کی سربراہی میں انکوائری کمیٹی بھی مقرر کردی ہے۔ جو اپنی رپورٹ 48 گھنٹوں میں بورڈ آف گورنرز کو جمع کرائے گی۔

News Code 1890576

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 10 =