پاکستان کے وزير اعظم عمران خان نے مشیر خزانہ عبدالحفیظ سے مشاورت کے بعد چیئرمین فیڈل بورڈ آف ریونیوجہا نزیب خان اور گورنر اسٹیٹ بینک طارق باجوہ کو عہدوں سے ہٹا دیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکسپریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے وزير اعظم عمران خان نے مشیر خزانہ عبدالحفیظ سے مشاورت کے بعد چیئرمین فیڈل بورڈ آف ریونیوجہا نزیب خان اور گورنر اسٹیٹ بینک طارق باجوہ کو عہدوں سے ہٹا دیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق چیئرمین ایف بی آر  اورگورنر اسٹیٹ بینک کو عہدوں سے ہٹانے کا فیصلہ سابق وزیر خزانہ اسدعمر کے دور میں کیا گیا تھا تاہم آئی ایم ایف سے بیل آؤٹ پیکیج  ، ریونیو معاملات اور اقتصادی صورتحال کو درپیش چیلنجز کو مد نظر رکھتے ہوئے مشیر خزانہ عبدالحفیظ سے مشاورت کے بعد وزیراعظم نے فوری طور پر یہ بڑا اقدام اٹھایا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ چیئرمین ایف بی آر کو ہٹانے کی بڑی وجہ  ماہِ اپریل میں ریونیو شارٹ فال اور ایمنسٹی اسکیم پر تحفظات ہیں، اور انہی وجوہات کے باعث وزیراعظم نے بغیر کسی تاخیر کے جہانزیب خان کو عہدے سے ہٹایا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ گورنر اسٹیٹ بینک  طارق باجوہ نے وزارت خزانہ کے توسط سے استعفیٰ  وزیراعظم سیکریٹریٹ ارسال کردیا ہے۔

News Code 1890231

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 12 =