امارات کی علاقائی ممالک کے خلاف سرد جنگ/ تخریب کاری، دہشت گردی اورجاسوسی کا سلسلہ جاری

متحدہ عرب امارات کے وسیع جاسوسی نیٹ ورک کے علاقائي ممالک میں یکے بعد دیگرے پکڑے جانے کے بعد ابو ظہبی کے حکام کوعالمی سطح پر بڑی خفت اور رسوائی کا سامنا ہے ۔ ترکی اور قطر کے بعد اب عمان نے بھی امارات کے ایک بڑے جاسوسی نیٹ ورک کو گرفتار کرنے کا اعلان کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کے بین الاقوامی امور کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات کے وسیع جاسوسی نیٹ ورک کے علاقائي ممالک میں یکے بعد دیگرے پکڑے جانے کے بعد ابو ظہبی کے حکام کوعالمی سطح پر بڑی خفت اور رسوائی کا سامنا ہے ۔ ترکی اور قطر کے بعد اب عمان نے بھی امارات کے ایک بڑے جاسوسی نیٹ ورک کو گرفتار کرنے کا اعلان کیا ہے۔اطلاعات کے مطابق مشرق وسطی میں متحدہ عرب امارات کا بہت بڑا جاسوسی نیٹ ورک سرگرم اور فعال ہے جس کی نگرانی دبئی کے حاکم محمد بن راشد براہ راست کررہےہیں۔

الاخبار کے مطابق عمان کے سکیورٹی دستوں نے ملک میں سرگرم متحدہ عرب امارات کے ایک نئے جاسوسی نیٹ ورک کو گرفتار کرلیا ہے۔ عمان کے سکیورٹی دستوں نے ملک کے خلاف سرگرمی میں ملوث امارات کے جاسوسی نیٹ ورک کو شناسائی کے بعد گرفتار کیا ہے۔  الاخبار کے مطابق دبئی کے حاکم محمد بن راشد براہ راست امارات کے جاسوسی نیٹ ورک کی نگرانی کررہےہیں۔  اطلاعات کے مطابق اماراتی جاسوس اماراتی بینکوں کے کارکنوں کے روپ ميں تاجر بن کر عمان، قطر ، ترکی  اور دیگر علاقائی ممالک میں وسیع پیمانے پر جاسوسی کررہے ہیں۔ اس سے قبل ترکی اور قطر نے بھی متحدہ عرب امارات کے جاسوسی نیٹ ورک سے منسلک افراد کو گرفتار کیا تھا، ذرائع کے مطابق امارات بڑے پیمانے پر علاقائی ممالک میں جاسوسی کررہا ہے۔ عمان میں اماراتی جاسوسوں کی گرفتار کے بعد عمان اور امارات کے درمیان تناؤ بھی پیدا ہوگیا ہے عمان کے حکام نے امارات کو ایک دھمکی آمیز پیغام ارسال کیا ہے کہ جس میں کہا گیا ہے کہ امارات اپنے تمام جاسوسوں کی اطلاعات عمان کے حکام کو فراہم کرے اور اگر ایسا نہ کیا ، تو عمان ، امارات کے گرفتار ہونے والے جاسوسوں کے نام فاش کردےگا۔

اس سے قبل رائٹرز نے بھی اپنی ایک رپورٹ میں کہا تھا کہ متحدہ عرب امارات کے عناصر ایران، قطر، ترکی  اور دیگر ممالک کی جاسوسی کررہے ہیں اور امارات کو اس سلسلے میں امریکہ کے ریٹائرڈ فوجی افسروں کی مشاورت بھی حاصل ہے۔

امارات نے ترکی میں ہونے والے فوجی کودتا میں بھی اہم اور فعال کردار ادا کیا تھا۔ امارات سوڈان اور لیبیا میں بھی دہشت گردانہ سرگرمیوں ميں ملوث ہے۔ ذرائع کے مطابق امارات نے سیاسی اہداف تک پہنچنے کے لئے اپنے بہت بڑے جاسوسی نیٹ ورک کے ذریعہ علاقائی ممالک کے خلاف سرد جنگ چھیڑ رکھی ہے۔

News Code 1890230

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 4 =