امریکہ اور ایران کے درمیان لڑائی بعید ہے/ قیدیوں کا تبادلہ ممکن

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزير خارجہ محمد جواد ظریف نے کہا ہے کہ ایران اور امریکہ کے درمیان لڑائی بعید ہے قیدیوں کا تبادلہ ممکن ہے لیکن قیدیوں کے تبادلے میں زاغری شامل نہیں ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزير خارجہ محمد جواد ظریف نے اینڈیپینڈٹ کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران اور امریکہ کے درمیان لڑائی بعید ہے قیدیوں کا تبادلہ ممکن ہے لیکن قیدیوں کے تبادلے میں زاغری شامل نہیں ہے۔ ایرانی وزير خارجہ نے 2016 میں خلیج فارس میں امریکہ کی دو کشتیوں کے ایرانی سمندر میں غیر قانونی داخلے اور انھیں ایرانی بحریہ کی طرف سے گرفتار کئے جانے کیط رف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اس وقت میرے اور جان کیری کے درمیان رابطہ تھا جس کی وجہ سے مسئلہ کو فوری طور پر حل کرلیا گیا تھا۔ ایرانی وزير خارجہ نے کہا کہ خلیج  فارس میں کسی بھی غیر قانونی حرکت  سے لڑائی کے خ           طرات پیدا ہوسکتے ہیں۔ ظریف نے ایران اور امریکہ کے درمیان قیدیوں کے تبادلے کو ممکن قراردیتے ہوئے کہا کہ  قیدیوں کا تبادلہ میں برطانوی اور ایرانی  شہریت رکھنے والی نازنین زاغری شامل ہیں ۔ قیدیوں کے تبادلے ميں صرف امریکہ میں ایرانی قیدی اور ایران میں امریکی قیدیوں ہی شامل ہیں۔

News Code 1890211

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 7 =