امریکہ کا مصری تنظیم اخوان المسلمین پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مصری تنظیم اخوان المسلمین پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس سلسلے میں قانونی اور دیگر دستاویز کی تیاری پر کام جاری ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اے ایف پی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مصری تنظیم اخوان المسلمین پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس سلسلے میں قانونی اور دیگر دستاویز کی تیاری پر کام جاری ہے۔ وائٹ ہاؤس سے جاری باضابطہ اعلان کیا گیا ہے کہ امریکی انتظامیہ اس پر کام کررہی جس کے تحت اخوان المسلمون کو غیرملکی دہشت گرد جماعت قرار دیا جائے گا۔ اعلان کے فوراً بعد بالخصوص مصر اور مشرقِ وسطیٰ کی سب سے پرانی سیاسی مذہبی جماعت پر مالیاتی، معاشی اور سفری پابندیاں بھی عائد کی جائیں گی جس کے اراکین کی تعداد 10 لاکھ سے بھی زیادہ ہے۔

اپریل میں مصری صدر عبدالفتاح السیسی کی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات کے بعد یہ فیصلہ سامنے آیا ہے اور مصر پہلے ہی اخوان کو دہشتگرد جماعت قرار دے چکا ہے۔ امریکی ذرائع کے مطابق صدر السیسی نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے باضابطہ طور پر اس کی درخواست کی تھی۔ جبکہ منگل کے روز وائٹ ہاؤس کی پریس سیکریٹری سارہ سینڈرز نے اس فیصلے کی تصدیق بھی کی ہے۔ واضح رہے کہ امریکہ اور سعودی عرب نے مصر میں اخوان المسلمین کی جمہوری حکومت کا تختہ الٹنے اور اقتدار مصری فوج کے حوالے کرنے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔ واضح رہے کہ 2013ء میں فوج کے سربراہ جنرل عبدالفتاح السیسی نے اخوان المسلمون کی سابق صدر محمد مرسی کی صدارت میں بننے والی حکومت  کا تختہ الٹ کر اقتدار پر قبضہ کرلیا تھا۔ سعودی عرب نے اس سلسلے میں مصری فوج کو بھاری مقدار میں رشوت بھی ادا کی تھی۔

News Code 1890150

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 2 =