فرانس میں پیلی جیکٹ والوں کے مظاہرے 23ویں ہفتے بھی جاری

فرانس بھر میں پیلی جیکٹ والوں کے مظاہرے 23ویں ہفتے میں داخل ہوگئے جبکہ مختلف مقامات پر مظاہریں اور پولیس کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی اے ایف پی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ فرانس بھر میں پیلی جیکٹ والوں کے مظاہرے 23ویں ہفتے میں داخل ہوگئے جبکہ مختلف مقامات پر مظاہریں اور پولیس کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئیں۔ مظاہرین صدر ایمانوئل ماکرون کے مستعفی ہونے کا مطالبہ کررہے تھے، گزشتہ ہفتے کی نسبت آج مظاہرین کی تعداد بھی زیادہ تھی۔ مظاہرین نے چھوٹے بڑے شہروں میں چوراہوں پر ٹریفک بلاک کردیا تھا جبکہ وہاں سے گزرنے والے افراد مظاہرین کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے رہے۔ مظاہروں کے دوران دو پولیس اہلکار زخمی ہوگئے جبکہ پولیس نے توڑ پھوڑاور گاڑیوں کو آگ لگانے کے الزام میں 126 افراد گرفتارکرلیا۔ حکومت کا کہنا تھا کہ یورپ کے مختلف مقامات سے لوگ آتشزدگی سے متاثرہ نوٹر ڈیم چرچ دیکھنے آرہے ہیں اس لئے شانزلیزے اور دیگر اہم مقامات پر اجازت نہیں دی جا سکتی۔

News Code 1889870

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 2 =