کراچی میں تیز ہواؤں اور آندھی کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک

پاکستان کے صوبہ سندھ کے ساحلی علاقوں میں آندھی اور مٹی کے طوفان کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک اور زخمی ہوگئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے صوبہ سندھ کے ساحلی علاقوں میں آندھی اور مٹی کے طوفان کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک اور زخمی ہوگئے ہیں۔ سندھ بھر کے ساحلی علاقوں میں آندھی اور تیز گرد آلود ہوائیں چل رہی ہیں جب کہ مختلف علاقوں میں بوندا باندی بھی ہوئی ہے۔ فضا میں دھول مٹی کی مقدار معمول سے کئی گنا بڑھ گئی ہے اور حد نگاہ کم ہوگئی ہے۔ گرد آلود ہواؤں کی وجہ سے کئی علاقوں میں بجلی کی تاریں بھی ٹوٹ گئی ہیں جس سے بجلی کی فراہمی متاثر ہوئی ہے۔

کراچی میں پیپلز چورنگی کے قریب درخت گرنے سے نوجوان جاں بحق ہوگیا۔ نارتھ ناظم آباد عبداللہ کالج کے قریب تیز ہوائوں کے باعث بجلی کا تار چلتی گاڑی پر گرا جس سے فوری آگ بھڑک اٹھی اور اس میں سوار افراد جھلس کر زخمی گئے۔ ٹیپو سلطان سگنل کے قریب اسکول کی چھت گرنے سے 5 بچے زخمی ہوگئے۔ میئر کراچی وسیم اختر نے شہر میں ایمرجنسی نافذ کرتے ہوئے عملے کو فورا پہنچنے کی ہدایت کی ہے۔ جیکسن کے علاقے میں گھر کی چھت گرنے سے کمسن بہن بھائی زخمی ہو گئے۔

گلبہار حاجی مرید گوٹھ میں گھر کی چھت گرنے سے 5 سالہ بچی تنزیلہ جاں بحق ہوگئی۔ لیاری غریب شاہ روڈ پر بھی مدرسے کی چھت گرنے سے 6 بچے زخمی ہوگئے۔ مٹی کے طوفان و تیز ہواؤں کے باعث متعدد ٹریفک حادثات بھی پیش آئے جس کے نتیجے میں کئی گاڑیاں آپس میں ٹکرا کرالٹ گئیں۔

News Code 1889722

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 10 =