شہبازشریف اور حمزہ شہباز پر فرد جرم عائد

پاکستان میں مسلم لیگ نون کے صدر شہباز شریف اور حمزہ شہباز پر رمضان شوگر ملز کیس میں فرد جرم عائد کردی گئی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ڈیلی پاکستان کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان میں مسلم لیگ نون کے صدر شہباز شریف اور حمزہ شہباز پر رمضان شوگر ملز کیس میں فرد جرم عائد کردی گئی ہے۔

اطلاعات کے ےمطابق احتساب عدالت میں آشیانہ اقبال اسکینڈل اوررمضان شوگر ملز کیس کی سماعت جج سید نجم الحسن کی سربراہی میں ہوئی، اس موقع پرسابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف اور حمزہ شہباز بھی کمرہ عدالت میں موجود تھے۔ شہبازشریف اورحمزہ شہبازکے وکیل امجد پرویزجب کہ نیب کی جانب سے اسپیشل پراسیکیوٹر وارث علی جنجوعہ نے دلائل دیے۔نیب پراسیکیوٹر نے اپنے دلائل میں کہا کہ رمضان شوگر ملز کیس میں مل کے لئے سرکاری خزانے سے نالہ بنایا گیا، یہ اختیارات سے تجاوز کا کیس ہے تاہم اسی دوران شہباز شریف نے کچھ کہنے کی کوشش کی تو جج نے انہیں روک دیا اور کہا کہ آپ کو سب کچھ کہنے اور سنانے کا موقع دیا جائے گا، یہ قانونی اور پروسیجرل چیزیں ہیں جو قانون کے مطابق ہونی ہیں۔ بعدازاں شہباز شریف نے عدالت کے سامنے اپنا موقف پیش کیا اور کہا انہوں نے 10 سالوں میں حکومت کے کئی سو ارب روپے بچائے ہیں، کیا انہوں نے نالے کیلیے سرکاری خزانہ استعمال کرنا تھا جس پر عدالت نے کہا کہ ابھی آپ پر الزام ہے جسے ثابت ہونا باقی ہے۔

عدالت نے فریقین کے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد شہباز شریف اور حمزہ شہباز پر فرد جرم عائد کردی تاہم دونوں ملزمان نے صحت جرم سے انکار کرتے ہوئے دستخط کرکے عدالتی دستاویزات پر انگوٹھے کے نشان بھی لگا دیے، عدالت نے آئندہ سماعت پر گواہوں کو شہادتوں کے لئے طلب کرتے ہوئے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کو جانے کی اجازت دے دی۔

News Code 1889548

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 11 =