امریکہ اور یورپ ، یمن شام اور افغانستان میں بچوں کی ہلاکتوں کے ذمہ دار ہیں

کیتھولک عیسائیوں کے پیشوا پوپ فرانسس نے کہا ہے کہ یمن، شام اور افغانستان میں جاری لڑائی کے دوران بچوں کی ہلاکتوں کے ذمہ دار امریکہ اور یورپ ہیں جو اپنا اسلحہ فروخت کرنے کے لئے جنگوں کو ہوا دے رہے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ کیتھولک عیسائیوں کے پیشوا پوپ فرانسس نے کہا ہے کہ یمن، شام اور افغانستان میں جاری لڑائی کے دوران بچوں کی ہلاکتوں کے ذمہ دار امریکہ اور یورپ ہیں جو اپنا اسلحہ فروخت کرنے کے لئے جنگوں کو ہوا دے رہے ہیں۔اطلاعات کے مطابق ویٹی کن سٹی میں طلبا سے خطاب کرتے ہوئے مسیحی رہنما پوپ فرانسس نے کہا کہ امیر ممالک اپنا اسلحہ فروخت کرنے کیلئے جنگوں کو ہوا دے رہے ہیں اور ان جنگ زدہ علاقوں میں ہلاک ہونے والے بچوں اور تباہ ہونے والے خاندانوں کی ذمہ داری مکمل طور پر امریکہ اور یورپ پر عائد ہوتی ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مہاجرین کے خلاف اقدامات اور میکسیکو سرحدی دیوار کی تعمیر پر پوپ فرانسس کا کہنا تھا کہ ایسے تمام سیاسی رہنما جو مہاجرین کو روکنے کیلئے دیوار اور رکاوٹیں بنانے کیلئے کوشاں ہیں وہ انھی دیواروں میں قید ہو کر رہ جائیں گے۔

پوپ فرانسس نے جنگ زدہ علاقوں سے محفوظ مقام کی جانب رخ کرنے والے مہاجرین کی حالت زار پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مہاجرین کی کفالت پر امیر ممالک کی غفلت قابل مذمت ہے حالانکہ یورپ کو مہاجرین نے بنایا اور امریکہ میں بھی شمالی افریقہ اور دیگر ممالک سے آئے ہوئے مہاجرین کی ثقافت نمایاں ہے۔

News Code 1889507

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 1 =