اللہ تعالی سندھ اور پاکستان کو عمران خان کے شر سے محفوظ رکھے

پاکستان کے رہنما خورشہد شاہ نے پاکستانی وزیر اعظم عمران خان پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کوجمہوری کہنا مناسب نہیں ہے درحقیقت یہ پرویز مشرف کے لوگ ہیں جو روپ بدل کر آئے ہیں اللہ تعالی سندھ اور پاکستان کو عمران خان کے شر سے محفوظ رکھے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان  کے رہنما خورشہد شاہ نے سکھرمیں میڈیا سے گفتگو میں  پاکستانی وزیر اعظم عمران خان پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کوجمہوری کہنا مناسب نہیں ہے درحقیقت یہ پرویز مشرف کے لوگ ہیں جو روپ بدل کر آئے ہیں اللہ تعالی سندھ اور پاکستان کو عمران خان کے شر سے محفوظ رکھے۔

خورشید شاہ نے کہا کہ پیپلزپارٹی نے ہمیشہ ملک بچانے کے لیے قربانی دی، ہم نے پارلیمانی نظام بہترکرنے کی کوشش کی، ہمیں کوشش کرنی چاہیے کہ ملک میں حقیقی جمہوریت آئے، ہم اب بھی حکومت کے ساتھ چلنے کوتیار ہیں، ہم جیلوں میں جانے کے لیے تیارہیں لیکن عمران خان ایک دن بھی جیل میں نہیں رہ سکتے، وہ خود اس بات کا اعتراف کرچکے ہیں۔پیپلزپارٹی کے رہنما کا کہنا تھا کہ سب کو سوچنا چاہیے کہ یہ حکومت جمہوری طریقے سے آئی ہے یا نہیں، پی ٹی آئی حکومت کوجمہوری کہنا مناسب نہیں، درحقیقت یہ پرویز مشرف کے لوگ ہیں جو روپ بدل کر آئے ہیں، پرویز مشرف کی کابینہ کو موجودہ حکومت کا حصہ بنایا گیا۔ پرویز مشرف کبھی وطن واپس نہیں آئیں گے۔

خورشید شاہ نے کہا کہ آج ملک میں مہنگائی کا سونامی ہے، عمران خان کےسونامی کا مطلب تباہی ہے، عمران خان کی تبدیلی میں ایک روپے والی چیز 5 روپے کی ہوگئی، تبدیلی کے باعث پشاور کا میٹرو بس منصوبہ 40 ارب سے 110 ارب کا ہوگیا، ملک نعروں سے نہیں چلے گا عملی طور پر کام کرنا ہوگا، ڈالر کی قدر میں اضافے کی تحقیقات ہونی چاہییں، حکومت کے پاس مہنگائی کے سونامی کا کوئی جواب نہیں، عمران خان کہتے تھے کہ حکومت میں آکر مہنگائی کم کریں گے، قوم کو مہنگائی کم نہ کرنے پرعمران خان سے استعفی کا مطالبہ کرنا چاہیے۔

News Code 1889268

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 5 =