سعودی عرب کے بادشاہ کو دھچکہ/ تیونس کی یونیورسٹی کا اعزازی ڈگری دینے سے انکار

تیونس کی الزیتونہ یونیورسٹی کے سربراہ نے کہا ہے کہ یونیورسٹی کے حکام نے سعودی عرب کے بادشاہ شاہ سلمان کو ڈاکٹری کی اعزازی ڈگری دینے سے انکار کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے العربی الجدید کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ تیونس کی الزیتونہ  یونیورسٹی کے سربراہ ہشام قریسہ نے کہا ہے کہ یونیورسٹی کے حکام نے سعودی عرب کے بادشاہ شاہ سلمان کو ڈاکٹری کی اعزازی ڈگری دینے سے انکار کردیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ الزیتونہ یونیورسٹی کو سعودی عرب کے بادشاہ کو ڈاکٹری کی اعزازی ڈگری دینے کی تجویز پیش کی گئی ، جسے یونیورسٹی کے حکام نے رد کردیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ الزیتونہ یونیورسٹی کی اعزازی ڈگری صرف محققین کو دی جاتی ہے اور یونیورسٹی صرف اپنے قوانین کے دائرے میں عمل کرےگی۔ اس نے کہا تیونس کے سیاسی حکام دیگر طریقوں سے سعودی بادشاہ کا خیر مقدم کرسکتے ہیں ۔ادھر الزیتونہ یونیورسٹی کے ایک پروفیسر سامی براہم نے یونیورسٹی کے اس اقدام کی تعریف کرتے ہوئے کہا ہے کہ الزیتونہ یونیورسٹی کا یہ اقدام قابل تعریف اور لائق تحسین ہے۔ سعودی عرب کے بادشاہ عنقریب تیونس کا دورہ کرنے والے ہیں۔ ذرائع کے مطابق عرب اقوام اس بات پر متفق ہیں کہ سعودی عرب کے بادشاہ خطے میں امریکی اور اسرائیلی ایجنٹ اور آلہ کار ہیں۔ جو ٹرمپ کا یار ہے وہ اسلام اور مسلمانوں کا غدار ہے۔

News Code 1889199

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 12 =