میکسکو کے ساتھ ملحقہ سرحد پر دیوار کی تعمیر کے لیے ایک ارب ڈالرمنظور

امریکی وزارت دفاع پینٹاگون کے قائم مقام سربراہ پیٹرک شناہان نےمیکسکو کے ساتھ ملحقہ سرحد پر دیوار کی تعمیر کے لیے ایک ارب ڈالر دینے کی اجازت دے دی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی وزارت دفاع پینٹاگون کے قائم مقام سربراہ پیٹرک شناہان نےمیکسکو کے ساتھ ملحقہ سرحد پر دیوار کی تعمیر کے لیے ایک ارب ڈالر دینے کی اجازت دے دی ہے۔اطلاعات کے مطابق ہوم لینڈ سیکیورٹی ڈپارٹمنٹ نے ڈونلڈ ٹرمپ کے ایمرجنسی نافذ کرنے کے اعلان کے بعد پینٹاگون سے 57 میل (92 کلومیٹر ) طویل دیوار کی تعمیر، سڑکوں کی بہتری کے لیے تعاون طلب کیا تھا۔پینٹاگون کی جانب سےجاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ’ پیٹرک شناہان نے امریکی آرمی انجینئرز کمانڈر کو ہوم لینڈ سیکیورٹی اور کسٹمز اینڈ بارڈر پیٹرول سے تعاون کے لیے ایک ارب ڈالر سے متعلق منصوبہ بندی اور اس پر عملدرآمد کی اجازت دی ہے‘۔ انہوں نے کہا کہ قائم مقام سربراہ نے وفاقی قانون کا جائزہ لیا تھا جو پینٹاگون کو قانون نافذ کرنے والی وفاقی ایجنسیوں کی حمایت میں امریکہ کی بین الاقوامی سرحدوں پر انفراسٹرکچر تعمیر کرنے کی اجازت دیتا ہے۔

واضح رہے کہ دسمبر 2018 میں کانگریس نے امریکی صدر کے مطالبے پر دیوار کی تعمیر کے لیے 5 ارب 70 کروڑ ڈالر فنڈز کے اجرا کی منظوری دینے سے انکار کردیا تھا جس کی پاداش میں ڈونلڈ ٹرمپ نے حکومتی اداروں کے لیے پیش کیے جانے والے بجٹ پر دستخط کرنے سے انکارکردیا تھا۔

News Code 1889181

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 14 =