سعودی عرب کا جولان کی بلندیوں کے بارے میں عوام فریبانہ بیان

خطے میں امریکہ اور اسرائیل کے پٹھو سعودی عرب نے بھی اپنے آقا امریکہ کی جانب سے جولان کے پہاڑی علاقے کو اسرائیل کی ملکیت تسلیم کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ علاقہ عرب علاقہ تھا اور عرب علاقہ ہی رہے گا۔ سعودی عرب کے اس بیان کو عوام فریبانہ بیان قراردیا جارہا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ خطے میں امریکہ اور اسرائیل کے پٹھو سعودی عرب نے بھی اپنے آقا امریکہ کی جانب سے جولان کے پہاڑی علاقے کو اسرائیل کی ملکیت تسلیم کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا  ہے کہ یہ علاقہ عرب علاقہ تھا اور عرب علاقہ ہی رہے گا۔ سعودی عرب کے اس بیان کو عوام فریبانہ بیان قراردیا جارہا ہے۔اطلاعات کے مطابق سعودی حکومت کی جانب سے جاری بیان میں امریکہ کے جولان پہاڑی کے علاقے پر اسرائیلی قبضے کو آئینی تسلیم کرنے کے فیصلے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اس فیصلے کو خطے کے امن کے لیے خطرناک قرار دیا ہے۔

سعودی حکومت نے امریکہ پر واضح کیا ہے کہ جولان کا پہاڑی علاقہ ایک عرب علاقہ ہے جس پر اسرائیل نے ناجائز قبضہ کر رکھا ہے اور قبضہ ملکیت نہیں بن جاتا ہے، مستقبل میں بھی یہ علاقہ عرب کا حصہ رہے گا۔ امریکی صدر کو اپنے متنازعہ فیصلے کو واپس لیکر خطے میں امن کے خطرے کو ٹال دینا چاہیے۔ عرب ذرائع ابلاغ سعودی عرب کے اس بیان کو عوام فریبانہ بیان قراردے رہے ہیں کیونکہ سعودی عرب خطے میں امریکی اور اسرائیلی ایجنڈے پر کام کررہا ہے۔

News Code 1889169

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 0 =