پاکستان کا بھارتی ہندوؤں کے لئے آزاد کشمیر میں شارد مندر راہداری کھولنے کا اشارہ

پاکستان نے سکھوں کے لئے کرتارپور راہداری معاہدے کے بعد اب بھارتی ہندوؤں کے لئے بھی آزادکشمیرمیں قدیم مقدس ترین شاردا مندر کی بحالی اوروہاں تک رسائی کے لئے راہداری کھولنے کا گرین سگنل دے دیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان نے سکھوں کے لئے کرتارپور راہداری معاہدے کے بعد اب بھارتی ہندوؤں کے لئے بھی آزادکشمیرمیں  قدیم  مقدس  ترین شاردا مندر کی بحالی اوروہاں تک رسائی کے لئے راہداری کھولنے کا گرین سگنل دے دیا ہے۔ سکھوں کے مطالبے پر جہاں پاکستان اوربھارت کرتارپور راہداری کھولنے پررضامندہوئے وہیں بھارتی ہندوؤں کا بھی طویل عرصے سے دونوں حکومتوں سے مطالبہ رہا ہے کہ آزادکشمیرمیں واقع ان کے قدیم اورمقدس ترین مندر شاردا تک جانے کی اجازت ملنی چاہیے۔ پاکستانی وزارت خارجہ کے ذرائع کے مطابق بھارتی وزارت خارجہ کی طرف سے شاردا راہداری کھولنے کے لئے باقاعدہ ایک تجویزپاکستان کو بھیجی جاچکی ہے، کرتارپورراہداری کے بعد اب ہندوؤں کے لئے بھی ایک بڑی خوشخبری ملنے کا وقت آگیا ہے، حکومتی رکن اسمبلی چندروز میں وہاں کا دورہ کرکے رپورٹ وزیراعظم کوپیش کریں گے۔

شاردامندرہندوؤں کا قدیم ترین مندرہے جو علم ودانش کی دیوی شاردا کے نام سے منسوب ہے۔ یہ مندرتقریبا5 ہزارسال پرانا مندرہے جو 237 قبل از مسیح میں مہاراجہ اشوکا نے تعمیرکروایا تھا۔ مندرکے قریب ہی  مدومتی کا تالاب ہے ، ہندو اس تالاب کے پانی کو کٹاس راج کی طرح مقدس مانتے ہیں  اوریہاں اشنان کرتے ہیں۔

News Code 1889138

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 1 =