ہندوستان کو نہیں نریندر مودی کو خطرہ / بی جے پی عوام کی تقسیم کررہی ہے

جموں کشمیر کی سیاسی پارٹی نیشنل کانفرنس کے صدر اورکشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے ہندوستان کی بھارتیہ جنتا پارٹی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ بی جے پی لوگوں کو تقسیم کر رہی ہے ۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ہندوستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ جموں کشمیر کی سیاسی پارٹی نیشنل کانفرنس کے صدر اورکشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے ہندوستان کی بھارتیہ جنتا پارٹی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ بی جے پی لوگوں کو تقسیم کر رہی ہے ۔فاروق عبداللہ نے کہا کہ  انڈیا نہیں بلکہ نریندر مودی خطرے میں ہے،میں بوڑھا ہوچکا ہوں، اس لئے میں نہیں بلکہ عمر عبداللہ ریاست کے اگلے وزیر اعلیٰ بنیں گے جبکہ میں خود پارلیمانی چناؤ جیت کر پارلیمان میں جاؤں گا۔بھارتی نجی ٹی وی کے مطابق ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق عبد اللہ کا کہنا تھا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی لوگوں کو مذہب، طبقوں اور علاقوں کے نام پر بانٹ رہی ہے،مودی حکومت نے ہر سال دو کروڑ نوکریاں دینے، ہر کنبے کو  15  لاکھ روپے فراہم کرنے اور مہنگامی کم کرنے کا وعدہ کیا تھا، لیکن سب جھوٹ ثابت ہوا، کب تک ہم یہ جھوٹ سنتے رہیں گے؟ دیش خطرے میں نہیں بلکہ مودی جی خطرے میں ہے،افسوس تو اس بات کا ہے کہ لوگوں کو بانٹا جارہا ہے،ہندو الگ، پھر ہندوؤں میں شیڈول کاسٹ الگ ، برہمن الگ ، سکھوں کو الگ کھڑا کرو،  مسلمانوں کو الگ کھڑا کرو، پھر مسلمانوں میں شیعہ کو الگ کھڑا کرو اور سنی کو الگ کھڑا کرو، اس ملک میں وہ لوگ عوامی نمائندے بننے چاہیے جو لوگوں کے درد کو سمجھ سکیں،صرف نعرے بازی نہیں، نعرے بازی سے بھارت نہیں چلے گا۔انہوں نے کہا کہ مودی نے میڈیا کو خرید رکھا ہے ،اخباروں کو خرید رکھا ہے ،ٹیلی ویژن چینلز کو خرید رکھا ہے ،یہ روز اُن کی ہی خبریں چلاتے ہیں کیونکہ اِن کے پاس پیسے ہیں لیکن انہیں یہ پتا نہیں کہ نہ پیسہ رہے گا اور نہ ہی ٹی وی چینلز ،ایک دن ایسا ضرور آئے گا کہ میڈیا اپنا رویہ بدل لے گا اور وہ وقت جلد آنے والا ہے۔

News Code 1888939

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 15 =