تیونس کے سرکاری مرکز صحت میں مزید 15 نومولود ہلاک

افریقی ملک تیونس کے سرکاری مرکزِ صحت برائے زچہ و بچہ میں انفیکشن کے باعث مزید 15 ہلاک ہونے سے مجموعی تعداد 22 ہوگئی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اے ایف پی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افریقی ملک تیونس کے سرکاری مرکزِ صحت برائے زچہ و بچہ میں انفیکشن کے باعث مزید 15 ہلاک ہونے سے مجموعی تعداد 22 ہوگئی۔

تیونس کے سرکاری ہسپتال میں ہونے والی مسلسل اموات سے عوامی سطح پر شدید غم و غصہ پایا جارہا ہے۔ اس حوالے سے طبی ماہرین نے تصدیق کی گزشتہ روز 15 نوزائیدہ بچے ہلاک ہوئے۔ گزشتہ ہفتے ربطہ نامی ریاستی ہسپتال میں نومولود بچوں کی اموات کے بعد تحقیقات کا آغاز ہوا تھا۔ اس حوالے سے انکوائری کے مطابق گزشتہ 16 دنوں کے دوران تقریباً 22 بچے ہلاک ہو چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ طبی طور پر ثابت ہو چکا کہ 15 بچوں کی اموات بلواسطہ یا بلاواسطہ بیکٹریا انفکیشن کے باعث ہوئی۔

خیال رہے کہ بچوں کی اموات کے بعد وزیر صحت سمیت شعبہ صحت سے تعلق رکھنے والے متعدد سینئر افسران نے استعفیٰ پیش کردیا تھا۔

News Code 1888893

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 8 =