پاکستان کی قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی/ اسپیکر کی ڈائس کے سامنے نماز برپا

پاکستان کی قومی اسمبلی کے اجلاس میں فنانس بل کی منظوری کےعمل کے دوران ہنگامہ آرائی ہوئی اور اپوزیشن ارکان نے نشستوں پر کھڑے ہوکر احتجاج کیا، اس دوران اپوزیشن نے ایوان میں اسپیکر کی ڈائس کے سامنے ہی نماز شروع کردی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کی قومی اسمبلی کے اجلاس میں فنانس بل کی منظوری کےعمل کے دوران ہنگامہ آرائی ہوئی اور اپوزیشن ارکان نے نشستوں پر کھڑے ہوکر احتجاج کیا، اس دوران اپوزیشن نے ایوان میں اسپیکر کی ڈائس کے سامنے ہی نماز شروع کردی۔ قومی اسمبلی اجلاس میں مالیاتی بل کی منظوری کے دوران ہنگامہ آرائی ہوئی اس دوران اپوزیشن نے ایوان میں اسپیکر کی ڈائس کے سامنے ہی نماز شروع کردی۔جمعیت علمائے اسلام کے رہنما اسعد محمود نے قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران ہی نماز پڑھانا شروع کردی۔مولانا اسعد محمود نے کہا کہ ہم پرسوں سےقراردادمذمت پیش کرناچاہتےہیں جوآپ پیش نہیں کرنےدے رہے۔جے یو آئی کے مولانا اسعد محمود نے اسپیکر کی اجازت کے بغیر قرارداد پیش کرنا شروع کر دی۔اسپیکر قومی اسمبلی نے کہا کہ قرارداد آپ ایسے پیش نہیں کر سکتے پہلے نوٹس دینا پڑتا ہے۔ اسد قیصر نے مولانا اسعد محمود سے کہا کہ رولز کے مطابق آپ ایسے پیش نہیں کر سکتے۔ اسپیکر نے مائیک وزیرخزانہ اسد عمر کو دے دیا جس پر جے یو آئی ف کے ارکان نے ایوان میں شدید احتجاج کیا ۔

News Code 1888633

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 5 =