سمیع الحق کے قتل کے الزام میں ان کے سیکریٹری گرفتار

پاکستانی پولیس نے جمعیت علمائے اسلام سمیع الحق کے سربراہ مولانا سمیع الحق کے قتل کے الزام میں ان کے سیکریٹری سید احمد شاہ کو گرفتارکرلیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ڈان کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستانی پولیس نے جمعیت علمائے اسلام سمیع الحق کے سربراہ مولانا سمیع الحق کے قتل کے الزام میں ان کے سیکریٹری سید احمد شاہ کو گرفتارکرلیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق اس بارے میں گفتگو کرتے ہوئے ایک سینئر پولیس اہلکار نے بتایا کہ تحقیقات کے دوران سید احمد شاہ کے ابتدائی اور بعد میں دیے گئے بیانات میں تضاد سامنے آیا جس کے بعد گرفتاری عمل میں آئی۔

انہوں نے بتایا کہ اپنے ابتدائی بیان میں احمد شاہ نے دعویٰ کیا تھا کہ قریبی فلٹریشن پلانٹ سے پانی بھرنے کے لیے جاتے ہوئے گھر کا مرکزی دروازہ انہوں نے باہر سے مقفل کردیا تھا تاہم بعد میں اس کا کہنا تھا کہ گیٹ لاک نہیں کیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ پولیس سے احمد شاہ کو قتل کے الزام میں گرفتار کر کے مقامی عدالت سے 4 روزہ جسمانی ریمانڈ حاصل کرلیا۔

واضح رہے کہ مولانا سمیع الحق کو گزشتہ برس 2 نومبر کو بحریہ ٹاؤن سفاری والا میں موجود ان کی رہائش گاہ پر قتل کردیا گیا تھا جب ان کا سیکریٹری احمد شاہ مبینہ طور پر فلٹریشن پلانٹ سے پانی بھرنے گیا ہوا تھا۔

News Code 1888515

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 11 =