عرب دنیا کی پہلی خاتون وزیر داخلہ نے لبنان میں اپنا عہدہ سنبھال لیا

لبنان کی نئی وزیر داخلہ نے اپنا عہدہ سنبھال لیا جس کے بعد وہ طاقتور سیکیورٹی ایجنسیز کی سربراہ کا عہدہ سنبھالنے والی عرب دنیا کی پہلی خاتون بن گئیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے عرب ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ لبنان کی نئی وزیر داخلہ نے اپنا عہدہ سنبھال لیا جس کے بعد وہ طاقتور سیکیورٹی ایجنسیز کی سربراہ کا عہدہ سنبھالنے والی عرب دنیا کی پہلی خاتون بن گئیں۔ ریا الحسن نے اس چیلنج کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ لبنانی وزیراعظم سعد حریری نے ان پر اعتماد کرتے ہوئے یہ انتہائی اہم ذمہ داری انہیں سونپی۔

اسی سلسلے میں منعقدہ تقریب میں ان کا کہنا تھا کہ پہلی خاتون وزیر داخلہ کی حیثیت سے مجھے یہ ثابت کرنا ہے کہ ایک خاتون ایسے اہم عہدے کو سنبھالنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ ریا الحسن نے جارج واشنگٹن یونیورسٹی سے ماسٹرز کی ڈگری حاصل کی اور وہ لبنان کی حکمران جماعت فیوچر موومنٹ پارٹی (تیار الامستقبل) کی رکن اور 30 رکنی کابینہ میں شامل 4 خواتین میں سے ایک ہیں، یہ پہلا موقع ہے کہ لبنانی کابینہ میں اتنی تعداد میں خواتین شامل کی گئیں ہیں۔

2009 میں لبنان کے ساتھ عرب دنیا کی پہلی وزیر خزانہ بن کر وہ اس سے قبل بھی خبروں کی زینت بن چکی تھیں، وہ 2 سال تک اس عہدے پر فائز رہیں اور ساحلی شہر تریپولی کی ترقی کے لیے بنائی جانے والی سب سے بڑی سرکاری و نجی شراکت داری کی سربراہی بھی کی۔

News Code 1887933

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 9 =