پاکستان کے سینئر صحافی کا وزیر اعظم عمران خان پر قتل کروانے کا سنگین الزام

پاکستان کے سینئر صحافی و تجزیہ کار نصرت جاوید نے الزام عائد کیا ہے کہ انہیں وزیر اعظم عمران خان نے قتل کروانے کی کوشش کی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ڈیلی پاکستان کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے سینئر صحافی و تجزیہ کار نصرت جاوید نے الزام عائد کیا ہے کہ انہیں وزیر اعظم عمران خان نے قتل کروانے کی کوشش کی ہے۔ رات گئے نصرت جاوید نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ " اس وقت ایک بج کر 16 منٹ ہورہے ہیں اور وزیر اعظم پاکستان نے مجھے قتل کرنے کی کوشش کی ہے لیکن میں ابھی بھی زندہ ہوں" ۔ ایک اور تاکیدی ٹویٹ میں نصرت جاوید نے کہا کہ " وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے ابھی ابھی مجھے قتل کرنے کی کوشش کی ہے لیکن میں ابھی بھی زندہ ہوں" ۔ نصرت جاوید کا کہنا ہے کہ مجھے اس طریقے سے قتل کرنے کی کوشش کی گئی ہے کہ یوں لگے جیسے شراب پی کر گاڑی چلاتے ہوئے حادثہ ہوا ہو، میں پی ٹی آئی کے ٹرولز کا شکر گزار ہوں جنہوں نے میرے شک کو تقویت دی ہے۔ نصرت جاوید نے ایک اور ٹویٹ کا جواب دیتے ہوئے وضاحت کی کہ انہوں نے موت کو صرف 3 سے 5 منٹ کی دوری پر چکمہ دیا اور وہ جانتے ہیں کہ یہ سب کس نے کیا۔ انہوں نے کہا کہ انہیں صرف دھمکی نہیں دی گئی بلکہ باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت قتل کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

نصرت جاوید نے حملے کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ ان پر 6 لوگوں کے گینگ نے امام بارگاہ کے سامنے حملہ کیا ، حملہ آوروں میں سے ایک کسی شخصیت کا سگا بھائی بھی تھا۔ واضح  رہے کہ سینئر صحافی نصرت جاوید کا تعلق لاہور سے ہے لیکن وہ بھی بیشتر صحافیوں کی طرح اسلام آباد میں مقیم ہیں ۔ پاکستان کے وفاقی دارالحکومت کو یہ اعزاز بھی حاصل ہے کہ یہ صحافیوں کیلئے غیر محفوظ ترین علاقہ سمجھا جاتا ہے ۔

News Code 1886273

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 6 =