ایران کے تیل کو روکنے کی صورت میں خلیج فارس سے تیل کی ترسیل بند کردی جائےگی

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے امریکہ کی جانب سے عائد پابندیوں پر خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگرامریکہ نے ایران کے تیل کی برآمد کو روکنے کی کوشش کی تو پھر کوئی بھی تیل برآمد نہیں کرسکے گا اور خلیج فارس سے تیل کی ترسیل کو بند کردیا جائےگا۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے شاہرود میں عوام کے ایک عظيم الشان اجتماع سے خطاب میں امریکہ کی جانب سے عائد پابندیوں پر خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگرامریکہ نے ایران کے تیل کی برآمد کو روکنے کی کوشش کی تو پھر کوئی بھی تیل برآمد نہیں کرسکے گا اور خلیج فارس سے تیل کی ترسیل کو بند کردیا جائےگا۔صدر حسن روحانی نے کہا کہ امریکہ کو علم ہونا چاہیے کہ وہ ایران کے تیل کی برآمد روکنے کی صلاحیت نہیں رکھتا اور نہ ہی اسے ایسا کرنے دیا جائےگا۔ ایرانی صدر نے کہا کہ امریکہ کو یہ معلوم ہونا چاہیے کہ ہم اپنا تیل فروخت کر رہے ہیں اور یہ فروخت جاری رکھیں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ کو یہ معلوم ہونا چاہیے کہ اگر وہ ایران کے تیل کی برآمد کو روکنے کا ارادہ رکھتا ہے تو پھر خلیج فارس سے کوئی بھی تیل برآمد نہیں کرسکے گا۔ انھوں نے کہا کہ ایرانی قوم کے ساتھ امریکہ کی دشمنی اور عداوت کا سلسلہ جاری ہے انقلاب اسلامی کی کامیابی کے بعد امریکہ نے ایران کو تقسیم کرنے کی کوشش کی، ایران میں کودتا کی تلاش کی ، منافقین اور دہشت گردوں کو ایرانی قوم کے خلاف مدد فراہم کی اور آخر میں صدام معدوم کی عفلقی اور بعثی حکومت کے ذریعہ ایران پر آٹھ سال تک جنگ مسلط کی  لیکن ایرانی قوم نے ان تمام میدانوں میں امریکہ اور اس کے اتحادیوں کو شکست سے دوچار کردیا اور ایرانی قوم اس کے بعد بھی امریکہ کو ہر میدان میں شکست دینے کے لئے آمادہ ہے۔

News Code 1886178

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 2 =