چین کی حکمراں جماعت کی پارٹی کے مسلم رہنما کے خلاف بدعنوانی کی تحقیقات

چین کی حکمراں جماعت کمیونسٹ پارٹی کے مرکزی رہنما اور یوغور مسلمان نور باکری کے خلاف حکومت نے بدعنوانی کی تحقیقات شروع کر دیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایسوسی ایٹڈ پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ چین کی حکمراں جماعت کمیونسٹ پارٹی کے مرکزی رہنما اور یوغور مسلمان نور باکری کے خلاف حکومت نے بدعنوانی کی تحقیقات شروع کر دیں۔

حکمران کمیونسٹ پارٹی کے ادارہ انسداد بدعنوانی کی جانب سے جاری ایک مختصر بیان میں کہا گیا کہ نور باکری کے خلاف بدعنوانی کی تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں اور ان پر الزام ہے کہ وہ پارٹی کے نظم و ضبط اور قانون کی خلاف ورزی کے مرتکب ہوئے۔ خیال رہے کہ 57 سالہ نور 2014 میں سنکیانگ سے بیجنگ منتقل ہوئے تھے جہاں ان کو توانائی کے شعبے کا سربراہ بنایا گیا تھا اور ساتھ ہی انہیں چین کے نیشنل ڈیویلپمنٹ اینڈ ریفارم کمیشن کے ادارے چائنا اسٹیٹ پلاننگ ایجنسی کا نائب سربراہ بھی مقرر کیا گیا تھا۔

یاد رہے کہ نور باکری جب سنکیانگ کے گورنر تھے تو صوبے کے صدر مقام ارومچی میں یوغوروں کے خلاف ہلاکت خیز فسادات بھی ہوئے تھے۔

News Code 1884165

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 4 =