ہندوستانی حکومت کا جموں میں مسلمانوں کی بستی کو مسمار کرنے کا نوٹس جاری

ہندوستانی حکومت نے جموں میں چند برس قبل بسائی گئی مسلمانوں کی ایک کالونی کو مسمار کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے گھروں کو خالی کرنے کا نوٹس جاری کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے کشمیر ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ہندوستانی حکومت نے جموں میں چند برس قبل بسائی گئی مسلمانوں کی ایک کالونی کو مسمار کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے گھروں کو خالی کرنے کا نوٹس جاری کردیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق ضلع جموں کے علاقے بیلی چارانہ ستواری میں ہزاروں مسلمانوں نے چند برس قبل بشیر گجر بستی کے نام سے نئی کالونی کی بنیاد رکھی تھی۔ ہندوستانی حکومت نے مکینوں کو نوٹس جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ گھروں کو خالی کیا جائے تاکہ حکومت باآسانی ان گھروں کو مسمار کرسکے۔ مسلمانوں نے اس بستی میں 200 سے زائد گھر آباد کیے تھے اور وادی بھر سے ہزاروں مسلمان اس بستی میں منتقل ہوئے تھے۔

کشمیریوں کی جانب سے بھارتی حکومت کے اس فیصلے کو حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کا مسلمانوں کو جموں ریجن سے بے دخل کرنے کے منصوبے کا حصہ تصور کیا جا رہا ہے۔

News Code 1883671

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 3 =