پاکستان میں صدارتی انتخابات کے لئےقومی و صوبائي  اسمبلیوں ميں پولنگ جاری

پاکستان کے تیرہویں صدر کے انتخاب کے لئے پاکستانی سینیٹ، قومی اسمبلی اور چاروں صوبائی اسمبلیوں میں پولنگ جاری ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کے تیرہویں صدر کے انتخاب کے لئے پاکستانی سینیٹ، قومی اسمبلی اور چاروں صوبائی اسمبلیوں میں پولنگ  جاری ہے۔صدارتی انتخاب کے لئےایک ہزار ایک سو اکیس ووٹر شام چار بجے تک خفیہ رائے شماری کے تحت اپنا حق رائے دہی استعمال کریں گے جبکہ ووٹ ڈالتے وقت موبائل فون ساتھ لے جانے کی اجازت نہیں ہے۔

صدارتی انتخاب کے لیے تین امیدوار میدان میں ہیں اور بیلٹ پیپر پر پیپلز پارٹی کے امیدوار اعتزاز احسن کا نام پہلے نمبر پر موجود ہے جب کہ تحریک انصاف کے امیدوار ڈاکٹر عارف علوی دوسرے اور نون ليک  کے امیدوار مولانا فضل الرحمان کا نام تیسرے نمبر پر درج ہے۔

ذرائع کے مطابق شاہدہ اخترعلی صدارتی امیدوارمولانا فضل الرحمان کے ،عمران خٹک صدارتی امیدوارڈاکڑ عارف علوی کےاور سسی پلیجو صدارتی امیدواراعتزاز احسن کی پولنگ ایجنٹ مقرر کئے گئے ہیں۔

چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) سردار محمد رضا صدارتی انتخاب کے لیے ریٹرنگ آفیسر ہیں جبکہ چاروں صوبائی اسمبلیوں میں ہائی کورٹس کے چیف جسٹس صاحبان اور سینیٹ و قومی اسمبلی میں اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس پریزائیڈنگ آفیسر کی ذمہ داری سر انجام دے رہے ہیں۔ پولنگ کا عمل مکمل ہونے پر پریذائڈنگ افسران پول ووٹ کی تفصیلات کا اعلان کریں گے اور حتمی نتیجے کا اعلان چیف الیکشن کمشنر سردار محمد رضا خود کریں گے۔

ترجمان قومی اسمبلی کے مطابق صدارتی انتخاب کے لیے پولنگ صبح 10 بجے سے سہ پہر 4 بجے تک جاری رہے گی اور ووٹنگ کے لیے اراکین کو قومی اسمبلی کا کارڈ ساتھ لانا لازمی ہوگا۔

صدارتی الیکشن میں قومی اسمبلی ، سینیٹ اور بلوچستان اسمبلی کے ہر رکن کا ایک ایک ووٹ ہے،صدر کے الیکٹورل کالج میں ہر صوبائی اسمبلی کے ووٹ 65 ،، 65 ہیں ۔ الیکٹورل ووٹس کی مجموعی تعداد 706 بنتی ہے ،زیادہ ووٹ لینے والا امیدوار صدر منتخب ہوجائے گا ۔

News Code 1883642

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 5 =