صدر حسن روحانی پارلیمنٹ پہنچ گئے/پارلیمنٹ اور حکومت، اسلامی نظام کا واحد حصہ

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی ایرانی پارلیمنٹ کے نمائندوں کے سوالات کا جواب دینے پارلیمنٹ پہنچ گئے ہیں جہاں انھوں نے نمائندوں کے سوالات کو قوم کے سوالات قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ پارلیمنٹ اور حکومت دونوں اسلامی نظام کا واحد اورمتحد حصہ ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی ایرانی پارلیمنٹ کے نمائندوں کے سوالات کا جواب دینے پارلیمنٹ پہنچ گئے ہیں جہاں انھوں نے نمائندوں کے سوالات کو قوم کے سوالات قراردیتے ہوئے  کہا ہے کہ پارلیمنٹ اور حکومت دونوں اسلامی نظام کا واحد اورمتحد حصہ ہیں۔

صدر نے کہا کہ پارلیمنٹ کے نمائندوں کے سوالات کو پانچ شقوں پر مشتمل قراردیتے ہوئے کہا کہ یہ سوالات در حقیقت قوم کے سوالات بھی ہیں۔ صدر حسن روحانی نے کہا کہ ہم باہمی اتحاد اور یکجہتی کے ساتھ موجودہ مشکلات سے عبور کرجائیں گے۔ ہم گذشتہ 40 سال سے امریکی سازشوں کو ناکام بناتے چلے آئے ہیں اور مستقبل میں بھی ہم امریکی سازشوں کو ناکام بنادیں گے۔

صدر حسن روحانی نے ایران اور گروپ 1+5 کے درمیان ہونے والے مشترکہ ایٹمی معاہدے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کے ذریعہ دنیا پر ثابت کردیا کہ امریکہ جھوٹ بولتا ہے ایران کا ایٹمی پروگرام پرامن مقاصد کے لئے ہے  اور ہم نے ایٹمی معاملے میں امریکہ کو دنیا میں تنہا کردیا۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ مشترکہ ایٹمی معاہدے کے ذریعہ بعض اقتصادی مشکلات حل بھی ہوئیں ، انھوں نے کہا کہ آج دنیا میں کوئی بھی مشترکہ ایٹمی معاہدے کے بارے میں امریکہ کی بات سننے کے لئے تیار نہیں ۔ مشترکہ ایٹمی معاہدے میں شریک تمام ممالک ایٹمی معاہدہ کو جاری رکھنے کے خواہاں ہیں۔ امریکہ نے مشترکہ ایٹمی معاہدے سے خارج ہوکر خود کو عالمی سطح پر بے اعتبار کردیا ہے۔

صدر حسن روحانی نے عوامی مشکلات کو حل کرنے کے سلسلے میں تنیوں قوا کے درمیان اتحاد کو اہم قراردیا ۔ انھوں نے کہا کہ ہم نے بے روزگاری، کرپشن اور اسمگلنگ کے خلاف ٹھوس اقدامات انجام دیئے ہیں۔ حکومت نے اقتصادی شعبہ میں بھی درایت کے ساتھ امریکی سازش کو ناکام بنادیا ہے۔

News Code 1883445

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 10 =