امریکی صدر ٹرمپ  ایران کے ساتھ مذاکرات کی تمنا اپنے ساتھ قبر میں لے جائےگا

اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران میں نمازعید الاضحی آیت اللہ سید احمد خاتمی کی امامت میں منعقد ہوئی ، نماز عید کے خطبوں ميں آیت اللہ خاتمی نے امریکہ کی دوگانہ رفتار، منافقت اور فریب کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکی صدر ٹرمپ ایران کے سے مذاکرات کی تمنا اپنے ساتھ قبر میں لے جائےگا۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران میں نمازعید الاضحی آیت اللہ سید احمد خاتمی کی امامت میں منعقد ہوئی ، نماز عید کے خطبوں ميں آیت اللہ خاتمی نے امریکہ کی دوگانہ رفتار، منافقت اور فریب کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکی صدر ٹرمپ ایران کے سے مذاکرات کی تمنا اپنے ساتھ  قبر میں لے جائےگا۔ آیت اللہ خاتمی نے کہا کہ امریکہ جھوٹ بولتا ہے کہ وہ ایران سے مذاکرات نہیں کرنا چاہتا  جبکہ امریکی صدرڈونلڈ  ٹرمپ اقتدار میں آنے کے بعد 8 بار ایران سےمذاکرات کا مطالبہ کرچکے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ امریکی صدر ٹرمپ نے مشترکہ ایٹمی معاہدے سے خارج ہوکر تاریخی غلطی کا ارتکاب کیا ہے اور اب وہ ایران کے ساتھ مذاکرات کی آرزو قبر میں ساتھ  لے جائے گا اور ایران کبھی بھی اپنے دفاعی امور پر کسی سےمذاکرات نہیں کرےگا۔

خطیب نماز عید الاضحی نے عید قربان کو راہ خدا میں  فداکاری،  ایثار و قربانی کی عید قراردیتے ہوئے کہا کہ پیغمبر اسلام حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ و آۂہ وسلم زندگی کے تمام فردی،  سماجی، ثقافتی ،سیاسی اور خانوادگی شعبوں میں بہترین اسوہ اور نمونہ ہیں اور ہمیں موجودہ شرائط میں پیغبر اسلام کی زندگی کو اپنے لئے نمونہ عمل بنانا چاہیے ۔

آیت اللہ خاتمی نے کہا کہ پیغمبر اسلام (ص) کو بھی شدید ترین مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ، دشمنوں نے ان کے خلاف بھی اقتصادی پابندیاں عائد کیں اور آنحضور (ص) پر کئی جنگیں بھی  مسلط کی گئیں  ، حتی منافقین نے مدینہ منورہ میں متعدد بار پیغمبر اسلام (ص) کو قتل کرنے کی کوششیں کیں جو ناکام ہوگئیں۔

آیت اللہ خاتمی نے کہا کہ پیغمبر اسلام (ص) نے کبھی بھی دشمن کے سامنے غفلت، سستی اور مایوسی کا مظآہرہ نہیں کیا بلکہ انھوں نےمسلمانوں کو ہمیشہ دشمن کے سامنے ہوشیار رہنے ، بیدار رہنے اور دشمنوں کی سازشوں میں نہ آنے کے بارے میں تاکید کی ہے۔

News Code 1883281

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 4 =