قذافی نے اقتدار چھوڑنے کے بجائے امریکہ اور فرانس کے ساتھ گفتگو کا اعلان کیا ہے

لیبیا کے خونخوار اور ڈکٹیٹر صدرکرنل معمر قذافی نے اقتدار چھوڑنے کے بجائے امریکہ اور فرانس کے ساتھ گفتگو کرنے کا اعلان کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے الجزیرہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ لیبیا کے خونخوار اور ڈکٹیٹر صدرکرنل معمر قذافی نے اقتدار چھوڑنے کے بجائے امریکہ اور فرانس کے ساتھ گفتگو کرنے کا اعلان کیا ہے۔ معمر قذافی نے ایک بار پھر اقتدارچھوڑنے سے انکار کرتے ہوئے لیبیا میں جاری بحران کے لیے امریکہاور فرانس سے بات کرنے کی خواہش ظاہر کی ہے۔ایک نجی ٹی وی پر خطاب کرتے ہوئے معمر قذافی نے کہاوہ نہ تو کوئی سرکاری کام ترک کریں گے نہ ہی اپناملک چھوڑ کرجائیں گے۔ لیبیا میں فوج اورحکومت مخالفین کے درمیان کئی شہروں میں لڑائی جاری ہے۔لیبیا کی فوج نے مصراتہ کے نزدیک ایک اہم گزرگاہ پردوبارہ قبضہ کرلیا ہے۔ جبکہ طرابلس اورمصراتہ کے نواح میں نیٹو طیاروں کے حملے جاری ہیں۔  ذرائع کے مطابق امریکہ اور نیٹو اپنے مفادات کی خاطر لیبیا میں جنگ کو طول دینا چاہتے ہیں لیبیا کی جنگ میں اب تک دس ہزار سے زآئد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

News Code 1301088

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 6 =