البرادعی کی کتاب " عصر فریب" شائع// بش پر مقدمہ چلنا چاہیے

بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کے سابق سربراہ محمد البرادعی نے اپنی کتاب " عصر فریب " میں لکھا ہے کہ امریکہ کے سابق صدر جارج بش اور اس کے ساتھیوں پر عراق میں جنگی جرائم کے ارتکاب پر مقدمہ چلنا چاہیے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایسوسی ایٹڈ پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کے سابق سربراہ محمد البرادعی نے اپنی کتاب عصر فریب میں لکھا ہے کہ امریکہ کے سابق صدر جارج بش اور اس کے ساتھیوں پر عراق میں جنگی جرائم کے ارتکاب پر مقدمہ چلنا چاہیے۔ 68 سالہ البرادعی نے اپنی کتاب میں لکھا ہے عراق کی جنگ سے یہ سبق ملا ہے کہ عوام کو فریب دینا صرف چھوٹے ممالک تک محدود نہیں ہے جہاں بے رحم ڈکٹیٹر حکومت کرتے ہیں  البرادعی کو 2005 میں امن کا نوبل انعام بھی ملا ہے البرادعی نے ایران کے پرامن ایٹمی پروگرام کے بارے میں امریکہ کی کوششوں کو ناکام بنایا اور اور ایران کے ایٹمی پروگرام کو سفارتی ذرائع سے حل کرنے پر تاکید کی اور ایران کے  پر امن ایٹمی پروگرام کے بارے میں امریکہ کی غلط پالیسیوں البرادعی نے ہمیشہ سرزنش کی تھی۔

News Code 1295518

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 0 =