نواز شریف کو ضیاءالحق سے تعاون کرنے پر قوم سے معافی مانگنی چاہیے

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے پارلیمانی لیڈر مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ نواز شریف کو ضیاءالحق سے تعاون اور پرویز مشرف سے معافی مانگ کر ملک سے باہر جانے پر قوم سے معافی مانگنی چاہیے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے پارلیمانی لیڈر مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ نواز شریف کو ضیاءالحق سے تعاون اور پرویز مشرف سے معافی مانگ کر ملک سے باہر جانے پر قوم سے معافی مانگنی چاہیے۔ مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ پاکستان کو بچانے کے لیے سرائیکی، بہاولپور اور ہزارہ سمیت مزید صوبے بنانے کی سخت ضرورت ہے کیونکہ کہ پنجاب کی آبادی دس کروڑ ہوگئی ہے اور انتظامی طور پر ممکن ہی نہیں کہ ایک انسپیکٹر جنرل پولیس اور چیف سیکریٹری عوام کو سہولت دے سکیں۔’صوبے بنانا کوئی گناہ نہیں  اورہمیں پنجاب سے زیادہ پاکستان پیارا ہے۔۔ سرائیکی، بہاولپور اور پوٹوہار صوبے بننے چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ ضیاءالحق کی کابینہ میں شمولیت پر وہ آج تک شرمندہ ہیں اور وہ اس غلطی پر پوری قوم سے معافی مانگتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ اپنی جماعت کے رہنما نواز شریف اور میاں شہباز شریف سے بھی کہتے ہیں کہ وہ ضیاءالحق سے سیاسی تعاون اور پرویز مشرف سے سزا معاف کرواکر دس برس کے لیے باہر چلے جانے پر قوم سے معافی مانگیں۔

پارلیمان کے مشترکہ اجلاس سے صدر کے خطاب پر بحث کے دوران جاوید ہاشمی کی تقریر کے حوالے سےپیپلز پارٹی کے ندیم افضل چن نے کہا کہ ان کی دعا ہے کہ جاوید ہاشمی کی سوچ ان کی جماعت کی بھی ہوجائے،انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو رائےونڈ میں قید کیا گیا ہے اور انہیں اسمبلی میں آنے نہیں دیا جاتا۔’ ہمپر تنقید ہوتی ہے کہ امریکہ سے ڈکٹیشن لیتے ہیں لیکن کوئی سعودی عرب کی معرفت امریکی ڈکٹیشن لیتا ہے، کاش کوئی سعودی عرب سے کہے کہ وہ امریکہ کی پیغام رسانی بند کردے اور امریکہ سے ڈکٹیشن لینا چھوڑ دے۔

News Code 1294852

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 2 =