پاکستان میں اہلسنت کی مقدس زیارتگاہ پرخود کش حملے میں ملوث وہابی گرفتار

پاکستان میں وہابیوں سے منسلک طالبان دہشت گرد، اہلسنت کی مقدس زیارتگاہوں اور اولیاء خدا کے مزاروں کو مسلسل تباہ کررہے ہیں حال ہی میں پاکستان کے صوبہ پنجاب کے ضلع ڈیرہ غازی خان میں حضرت سخی سرور کے مزار پر ہونے والے وہابیوں کےخودکش حملوں کے ماسٹر مائنڈ سمیت پانچ ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان میں وہابیوں سے منسلک طالبان دہشت گرد، اہلسنت کی مقدس زیارتگاہوں اور اولیاء خدا کے مزاروں کو مسلسل تباہ کررہے ہیں حال ہی میں پاکستان کے صوبہ پنجاب کے ضلع ڈیرہ غازی خان میں حضرت سخی سرور کے مزار پر ہونے والے وہابیوں کےخودکش حملوں کے ماسٹر مائنڈ بہرام خان عرف صوفی بابا سمیت پانچ ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔پولیس کے مطابق بہرام خان ڈیرہ غازی خان میں مچھر دانیاں اور گرم جیکٹس بیچنے والے کے روپ میں مزار سخی سرور کے بارے میں معلومات لیتا رہا۔ ذرائع کے مطابق گرفتار ہونے والوں میں بہرام خان، منشی بشیر، فاروق، سلیم جان اور اصغر شامل ہیں۔ طالبان کی صفوں میں امریکی جاسوس ادارے کے اہلکار بڑے پیمانے پر گھسے ہوئے ہیں اورتشيمنم  سی آئی اے طالبان کو اپنے مقاصد کے لئے استعمال کررہی ہے. ذرائع کے مطابق طالبان کے اعلی کمانڈروں میں کئی امریکی کمانڈر شامل ہیں واضح رہے کہ طالبان کی بنیاد بھی امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے نے رکھی تھی اور وہ طالبان کو قریب سے جانتے ہیں۔

News Code 1292956

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 13 =