ایران اور مصر کے روابط پر تشویش بے معنی ہے

مصری وزارت خارجہ کے ترجمان نے خلیجی ممالک کی طرف سے ایران اور مصر کے باہمی تعلقات قائم کرنے پر تشویش کو بے معنی قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ ایران اور مصر کے روابط پر اسرائیل اورخلیجی ممالک کی تشویش بے معنی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق مصری وزارت خارجہ کے ترجمان منحہ باخوم نے مصری اخبار الیوم کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس وقت تہران اور قاہرہ کے درمیان سفارتی رابطے جاری ہیں مصری ترجمان نے کہا کہ حسنی مبارک ایران کو دشمن کی نگاہ سے دیکھتا تھا لیکن موجودہ حکومت کا ایسا کوئی نظریہ نہیں ، ہم ایران کو اس وقت ایک دوست اور برادر ملک کی نگاہ سے دیکھ رہے ہیں مصری وزارت خارجہ کے ترجمان نے خلیج فارس کے ممالک اور ایرا ن کے باہمی روابط کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ عرب ممالک کی قاہرہ اور تہران کے روابط پر تشویش بے معنی ہے واضح رہے کہ مصری فرعون حسنی مبارک کے زوال کے بعد مصر کی نئی حکومت نے ایران کے ساتھ سفارتی تعلقات بحال کرنے کے عزم کا اظہار کیا ہے، مصری فرعون حسنی مبارک کے اسرائیل اور امریکہ کے ساتھ گہرے روابط تھے جبکہ  ایران ، امریکہ اور اسرائیل کو عالم اسلام کا دشمن سمجھتا ہے اور اسی وجہ سے  مبارک کو ایران کے ساتھ دشمنی تھی۔

News Code 1291141

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 6 =