بحرینی عوام کے قتل عام پر امریکہ کی معنی خیز خاموشی

کوالالامپور- مہر خبررساں ایجنسی: اخبار ٹائمز نے لکھا ہے کہ لیبیا، یمن اور شام کے واقعات کی نسبت امریکہ بحرین کے واقعات پر بالکل سکوت اور خاموشی اختیار کئے ہوئے ہے اور سعودی حکام کے بحرین میں وحشیانہ سنگين جرائم پر انھیں داد تحسین دے رہا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق برونئی کے ایک اخـبار ٹائمز نے مشرق وسطی میں جاری عوامی تحریکوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ امریکہ لیبیا، شام، یمن ، اردن اور دیگر جگہوں پر بڑھ چڑھ کر بول رہا ہے لیکن بحرین میں شیخ حمد بن عیسی آلہ خلیفہ اور آل سعود کے سنگین اور وحشتناک جرائم پر باکل خاموش اور سکوت اختیار کئے ہوئے ہے بحرین میں فوجی حکومت اور ایمرجنسی کے اعلان کے بعد اب تک کئی درجن افراد جیلوں میں شہید کئے جا چکے ہیں قرآن مجید کو سعودی اور بحرینی سکیورٹی دستوں نےآگ لگائی ،پانچ مسجدوں کو اب تک تخریب کیا جاچکا ہے 150 سے  زائد کھلاڑیوں کو کھیل سے محروم کیا جاچکا ہے پانچ سو سے  زائد افراد جیلوں میں بند ہیں درجنوں افراد لاپتہ ہیں جیلوں میں زخمیوں پر تشدد کیا جارہا ہے اب تک 5 افراد جیلوں میں مارے جا چکے ہیں  بحرین میں ہونے والے مظالم پر امریکہ نے اپنی آنکھیں بند کررکھی ہیں کیونکہ ان مظالم کے پیچھے آل سعود اور آل خلیفہ کا ہاتھ ہے جہاں اسرائیل اور آل سعود اور آل خلیفہ کی بات آتی ہے وہاں امریکہ انسانی  حقوق اور جمہوریت کو بالکل فراموش کردیتا ہے۔ اخبار کے مطابق بحرینی عوام پر ہونے والے مظالم کے بارے میں آل سعود اور آل خلیفہ کو جواب دینا ہوگا کہ بحرین کے بےگناہ افراد کو کس جرم میں شہید کیا گیا کیا جہموریت اور اپنے حقوق کا مطالبہ جرم ہے؟ ۔

News Code 1291096

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 0 =