مصری فرعون حسنی مبارک کو پھانسی کی سزا ہوسکتی ہے

مصری ذرائع نے اعلان کیا ہے کہ امریکہ اور اسرائیل نوازمصری فرعون حسنی مبارک کو 800 مصری شہریوں کے قتل عام میں پھانسی کی سزا ہوسکتی ہے م مصری فرعون کو 15 دن کے لئے گرفتار کرلیا گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اخبار القدس العربی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ مصری فرعون حسنی مبارک نے 800 مصری شہریوں کا قتل عام کیا ہے اور مصری شہریوں کے قتل کے مقدمہ میں مصری فرعون کو پھانسی کی سزا دی جائے گی مصری فرعون کو 15 دن کے لئے گرفتار کرلیا گیا ہے۔ مصری عدالت کے ایک جج زکریا شلش  نے مصری اخـار الاہرام سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر حسنی مبارک کو عوامی قتل عام کے مقدمہ کا سامنا کرنا پڑا تو پھر پھانسی کی سزا یقینی ہے اس نے کہا کہ مصر کے سابق وزیر داخلہ نے اعتراف کیا ہے کہ مصری عوام کا قتل عام براہ راست حسنی مبارک کے حکم سے کیا گیا ہے اور اگر یہ ثابت ہوگیا تو مصر کے سابق امریکہ اور اسرائیل نواز ڈکٹیٹر صدر حسنی مبارک کو پھانسی کی سزا دی جائے گی۔

News Code 1290161

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 4 =